Sunday , December 17 2017
Home / شہر کی خبریں / حکومت تلنگانہ کیلئے ایک نئی مشکل

حکومت تلنگانہ کیلئے ایک نئی مشکل

سکریٹریٹ میں آندھرا کے 24 سیکشن آفیسرس کی تعیناتی
حیدرآباد 26 ستمبر (سیاست نیوز) ریاست آندھراپردیش سے تعلق رکھنے والے سیکشن آفیسرس جو فی الوقت تلنگانہ سکریٹریٹ میں خدمات انجام دے رہے ہیں اُنھیں ہائیکورٹ نے عارضی طور پر تلنگانہ میں ہی برقرار رکھنے کا حکم دیا ہے۔ اس کی وجہ سے سیکشن آفیسرس کی مختلف محکمہ جات میں تعیناتی کا عمل تلنگانہ کے لئے ایک بوجھ بن گیا ہے۔ آندھراپردیش سے تعلق رکھنے والے 24 سیکشن آفیسرس فی الوقت خدمات انجام نہیں دے رہے ہیں لیکن اُنھیں مکمل تنخواہ کی ادائیگی ضروری ہے۔ باوثوق ذرائع کے بموجب حکومت تلنگانہ نے قطعی الاٹمنٹ کے وقت ہی سکریٹریٹ میں خدمات انجام دے رہے آندھرا سے تعلق رکھنے والے 24 سیکشن آفیسرس کو موجودہ عہدوں سے سبکدوش کردیا تھا اور اُنھیں آندھراپردیش ریاست کا الاٹمنٹ دیا گیا۔ دوسری طرف حکومت آندھراپردیش نے اِن 24 سیکشن آفیسرس کی خدمات حاصل کرنے سے انکار کرتے ہوئے اُنھیں واپس بھیج دیا تھا۔ اس مسئلہ کی یکسوئی کے لئے حکومت تلنگانہ نے کوشش کی لیکن خاطر خواہ نتیجہ برآمد نہ ہوسکا۔ اِن حالات میں ہائی کورٹ کے فیصلے کی وجہ سے تلنگانہ حکومت کے لئے یہ ضروری ہوگیا ہے کہ سیکشن آفیسرس کی خدمات جاری رکھنے کے ساتھ ساتھ اُنھیں درمیانی مدت کی تنخواہ بھی ادا کی جائے۔

TOPPOPULARRECENT