Monday , December 11 2017
Home / شہر کی خبریں / حکومت تلنگانہ کے اقلیتوں سے ہمدردی کے دعوے کھوکھلے ثابت

حکومت تلنگانہ کے اقلیتوں سے ہمدردی کے دعوے کھوکھلے ثابت

شب معراج کے موقع پر شہر کے کئی علاقے تاریکی میں غرق ، عوام کی شدید برہمی ، منتخب نمائندے لاجواب
حیدرآباد ۔5مئی ( سیاست نیوز) ریاستی حکومت کی جانب سے کئے جانے والے اقلیتوں سے ہمدردی کے دعوے کھوکھلے ثابت ہو چکے ہیں ۔ حکومت تلنگانہ تہذیب کے احترام اور تلنگانہ میں منائے جانے والے تہواروں میں جوش و خروش کی برقراری کے اعلانات کرتی رہی ہے لیکن عملی طور پر اقلیتوں کو خوش کرنے میں حکومت ناکام ہو چکی ہے۔ شب معراج کے موقعہ پر شہر کے کئی علاقے رات دیر گئے تک تاریکی میں ڈوبے رہے۔ پرانے شہر کے علاقے فلک نما‘ جہاںنما‘ مصری گنج ‘ شاہ علی بنڈہ ‘ سید علی چبوترہ ‘ تاڑبن ‘ کالا پتھر ‘ بہادر پورہ ‘ مغلپورہ ‘ سلطان شاہی ‘ معین باغ‘ ریاست نگر ‘ عیدی بازار ‘ سنتوش نگر کے علاوہ نئے شہر کے علاقوں عابڈز ‘ نامپلی ‘ بشیر باغ‘ ریڈ ہلز ‘ آغا پورہ ‘ فرسٹ لانسرز ‘ محمدی لائن ، ٹولی چوکی مکمل ، حکیم پیٹ ، مہدی پٹنم و دیگر مقامات پر بھی شب معراج کے مقدس موقعہ پر برقی سربراہی میں خلل عوام بالخصوص مسلمانوں کیلئے انتہائی تکلیف دہ رہا۔ پرانے شہر کے کئی علاقوں میں تو برقی سربراہی رات ایک بجے کے قریب بحال کی گئی جبکہ برقی منقطع شام قریب 5بجے ہوئی تھی۔ آٹھ گھنٹے کے قریب برقی سربراہی منقطع رہنے پر عوام نے جب شدید برہمی کے عالم میں اپنے منتخبہ نمائندوں کو فون کرتے ہوئے مسئلہ سے واقف کروانے کی کوشش کی تو وہ دستیاب نہیں تھے یا پھر ان تک رسائی نہیں ہو پا رہی تھی۔ عہدیداروں کو واضح ہدایات کی اجرائی کے باوجود اس طرح کی غفلت سے ایسا محسوس ہوتا ہے کہ خود حکومت کو خشوع و خضوع کے ساتھ اہتمام میں کوئی دلچسپی نہیں ہے۔ سابق کے تجربوں کی بنیاد پر ہی یہ مطالبات کئے گئے تھے کہ بلا وقفہ برقی سربراہی کو یقینی بنایا جائے لیکن شب معراج کے موقع پر کئے گئے بدترین انتظامات سے ایسا محسوس ہوتا ہے کہ عنقریب شروع ہونے والے ماہ مقدس کے دوران بھی صرف احکامات اور بیانات تک ہی کار کردگی محدود رہے گی۔ کانگریس قائد جناب محمد غوث نے شب معراج النبی ؐ کے موقع پر بلا وقفہ برقی سربراہی میں ناکامی پر حکومت کو سخت تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے کہا کہ ریاستی حکومت کی عہدیداروں پر کمزور گرفت کے سبب عوام کو شدید مسائل کا شکار ہونا پڑ رہا ہے۔انہوں نے بتایا کہ اگررمضان ا لمبارک کے دوران اگر اس طرح کی کوتاہی ہوتی ہے تو ایسی صورت میں عہدیداروں اور منتخبہ عوامی نمائندوں کو شدید عوامی برہمی کا سامنا کرنا پڑ سکتا ہے ۔ جناب محمد غوث نے حکومت بالخصوص محکمہ برقی کے عہدیداروں سے اپیل کی کہ وہ ماہ شعبان المعظم اور ماہ رمضان المبارک کے دوران اس طرح کی کوئی کوتاہی نہ ہو اس کے لئے قبل از وقت اقدامات کو یقینی بنائے۔

TOPPOPULARRECENT