Wednesday , August 15 2018
Home / شہر کی خبریں / حکومت سے پٹرول و ڈیزل کی قیمتوں میں کمی کی کوئی تجویز نہیں

حکومت سے پٹرول و ڈیزل کی قیمتوں میں کمی کی کوئی تجویز نہیں

فیول کو جی ایس ٹی دائرہ میں شامل نہیں کیا جائے گا ڈپٹی چیف منسٹر کڈیم سری ہری کا کونسل میں جواب
حیدرآباد ۔10۔ نومبر (سیاست نیوز) ڈپٹی چیف منسٹر کے سری ہری نے کہا کہ تلنگانہ حکومت کی جانب سے پٹرول اور ڈیزل کی قیمتوں میں کمی کی کوئی تجویز نہیں ہے ۔ انہوں نے واضح کیا کہ پٹرول ، ڈیزل اور گیاس کو جی ایس ٹی کے دائرہ کار میں شامل کرنے کا کوئی منصوبہ نہیں ہے ۔ وقفہ سوالات کے دوران رکن کونسل پی سدھاکر ریڈی کے سوال پر ڈپٹی چیف منسٹر نے دیگر ریاستوں کے مقابلہ تلنگانہ میں پٹرول ، ڈیزل اور پکوان گیاس کی قیمتوں میں اضافہ کی تردید کی۔ انہوں نے کہا کہ پانچ ایسی ریاستیں ہیں جہاں پٹرولیم اشیاء کی قیمتیں تلنگانہ سے زیادہ ہے۔ انہوں نے بتایا کہ تلنگانہ میں پٹرول پر 35.2 فیصد اور ڈیزل پر 27 فیصد ویاٹ عائد کیا جاتا ہے ۔ مرکزی حکومت سے نمائندگی کی جارہی ہے کہ سنٹرل اکسائیز ڈیوٹی میں کمی کرتے ہوئے پٹرولیم اشیاء کی قیمتوں پر قابو پایا جائے تاکہ عوام پر بوجھ کم ہوسکے۔ انہوں نے کہا کہ مشن کاکتیہ اور مشن بھگیرتا جیسی اسکیمات پر عمل آوری کیلئے فنڈس کی ضرورت پڑتی ہے۔ ایسے میں حکومت پٹرولیم اشیاء پر ویاٹ میں کمی کا ارادہ نہیں رکھتی۔ اس طرح کے فیصلہ سے اسکیمات متاثر ہوں گی۔ قائد اپوزیشن محمد علی شبیر نے کہا کہ 2014 ء کے مقابلہ عالمی منڈی میں خام تیل کی قیمت فی بیارل 36 تا 40 ڈالر ہوچکی ہے۔ ایسے میں ہندوستان میں پٹرول کی قیمت 36 روپئے ہونی چاہئے جبکہ اس کی موجودہ قیمت 73 روپئے فی لیٹر ہے ۔ انہوں نے کہا کہ دنیا بھر میں پٹرول اور ڈیزل سب سے مہنگا ہندوستان میں ہے۔ حکومت کو قیمتوں میں کمی کے اقدامات کرنے چاہئے ۔

TOPPOPULARRECENT