Friday , December 15 2017
Home / اضلاع کی خبریں / حکومت فیئر پرائس شاپس کو بند کرنے کوشاں

حکومت فیئر پرائس شاپس کو بند کرنے کوشاں

بھینسہ۔/25اکٹوبر، ( سیاست ڈسٹرکٹ نیوز) بھینسہ شہر کے ڈاک بنگلہ احاطہ میں راشن ڈیلرس شاپ اسوسی ایشن کے ذمہ داران جن میں ضلع نائب صدر گوپال داس، ڈیویژن ذمہ دار شیرخان، سریش سہانے، مرزا جمیل بیگ ودیگر نے اخباری نمائندوں کو بتایا کہ تلنگانہ حکومت فیئر پرائس کی دوکانات کو بند کرتے ہوئے صارفین کو راست طور پر بینک اکاؤنٹ کے ذریعہ رقم ادا کرنے کے اقدامات کررہی ہے۔ تلنگانہ حکومت کے اس منصوبہ سے ریاست میں 18 ہزار راشن ڈیلرس روزگار سے محروم ہوجائیں گے اور صارفین بھی راشن سہولیات سے محروم ہوجائیں گے۔ اس لئے تلنگانہ حکومت راشن شاپس کو بند کرنے کے اقدامات سے دستبرداری اختیار کریں اور راشن ڈیلرس کے مسائل کی یکسوئی عمل میں لاتے ہوئے ڈیلرس کو تنخواہ مقرر کرے۔ انہوں نے کہا کہ اس ضمن میں تلنگانہ کے راشن ڈیلرس کی جانب سے چلو حیدرآباد پروگرام کا انعقاد 27 اکٹوبر کو عمل میں لایا جارہا ہے اور حیدرآباد میں اعلیٰ سطحی اجلاس ( مہا اجلاس ) منعقد کیا جارہا ہے۔ انہوں نے بھینسہ ڈیویژن کے تمام منڈلوں کے راشن ڈیلرس کو افراد خاندان اور ملازم ( نوکر ) کے افراد خاندان کے ہمراہ اس اجلاس میں شرکت کرتے ہوئے حکومت کی توجہ اس جانب مبذول کروانے کی خواہش کی۔ واضح رہے کہ حکومت کی جانب سے فیئر پرائس شاپس کو بند کرنے کی اطلاع عام ہوتے ہی بھینسہ شہر میں راشن صارفین میں بے چینی اور خوف کا ماحول دیکھا جارہا ہے۔ راشن صارفین کا کہنا ہے کہ درمیان و ادنیٰ اوسط کی عوام کو ماہانہ راشن ڈیلر شاپس کی اجناس و دیگر اشیاء کی خریدی پر آسانی کے ساتھ گذارا کیا جاتا ہے۔ اور روزانہ محنت مزدوری کرنے والے افراد راشن شاپس کے اجناس سے استفادہ کرتے ہوئے خوشحال زندگی گذاررہے ہیں لیکن حکومت کے اس فیصلہ سے عام آدمی اور اوسط گھرانوں کا کافی نقصان ہوگا اور محنت مزدوری روزانہ کرنے والا طبقہ زیادہ قیمت میں اجناس کی خریدی کیلئے پریشان ہوگا۔

TOPPOPULARRECENT