Tuesday , November 21 2017
Home / دنیا / حکومت مالدیپ کوشہری اور سیاسی حقوق یقینی بنانے کا مشورہ

حکومت مالدیپ کوشہری اور سیاسی حقوق یقینی بنانے کا مشورہ

وزار ت خارجہ امریکہ کے ترجمان کا بیان‘ نئے قوانین کی دفعات کے استحصال کا اندیشہ
واشنگٹن ۔8نومبر ( سیاست ڈاٹ کام ) ایف بی آئی نے ’’ کوئی فیصلہ کن ثبوت‘‘ نہیں پایا جس کے تحت کہاجاسکے کہ صدر مالدیپ کے کشتی میں  بم دھماکہ کیا گیا تھا ۔امریکہ نے آج کہا اور مالدیپ کی حکومت کو ’’ ایمرجنسی کے نفاذ اور نئے انسداد دہشت گردی قانون کی دفعات کے خلاف خبردار کیا کہ انہیں حریفوں کو نشانہ بنانے کیلئے استعمال کیا جاسکتا ہے ‘‘ ۔ دھماکو مادوں کے بارے میں حکومت مالدیپ کے انکشافات پر اعتراض کرتے ہوئے وزارت خارجہ امریکہ کے ترجمان نے کہا کہ اس بات کا کوئی قطعی ثبوت موجود نہیں ہے کہ صدرمالدیپ کی کشتی پر دھماکہ ترقی یافتہ دھماکو آلہ سے کیا گیا تھا ۔ ایف بی آئی کے تجزیہ نگاروں کے بموجب جس میں فارنسک تجزیہ بھی شامل ہے جو برسرموقع کیا گیا تھا ۔ظاہر ہوتا ہے کہ موقع واردات سے جو مادے حاصل ہوئے جن کی کیمیائی جانچ کی گئی ؎‘ جن سے اس بات کا کوئی ٹھوس ثبوت حاصل نہیں ہوا جس سے کشتی پر ترقی یافتہ دھماکو آلہ سے کئے گئے دھماکہ کی وجہ قرار دیا جاسکے ۔ ترجمان نے کہا کہ جو نمونے پیش کئے گئے تھے ان کے عناصر کا تجزیہ کیا گیا ۔ یہ اجزاء ترقی یافتہ دھماکو آلہ کے نہیں ہے ۔ صدر عبداللہ یامین اس دھماکہ میں بال بال بچ گئے تھے جو ان کی سرکاری کشتی پر 28ستمبر کو ہوا تھا ۔ ان کی شریک حیات معمولی سی زخمی ہوئی تھیں ۔ اس دھماکہ کے شبہ میں نائب صدر مالدیپ احمد ادیب کو گرفتار کرلیا گیاہے ۔ 4نومبر کو صدر یامین نے ملک میں 30دن کیلئے ہنگامی حالات نافذ کردیئے ‘انہوں نے کہا کہ قومی صیانت کو خطرہ لاحق ہے چنانچہ فوج کو لامحدود اختیارات دیئے گئے ہیں اور تحریک آزادی و اجتماع کو معطل کردیا گیا ہے جب کہ اسلحہ اور دھماکو مادے قصرصدارت کے قریب دستیاب ہوئے تھے ۔

TOPPOPULARRECENT