Saturday , November 18 2017
Home / سیاسیات / حکومت مہاراشٹرا سے استعفیٰ دینے بی جے پی کو چیلنج

حکومت مہاراشٹرا سے استعفیٰ دینے بی جے پی کو چیلنج

دیوالی کا تحفہ دینے والوں نے کسانوں کا دیوالیہ نکال دیا : ادھوٹھاکر
ممبئی ۔ 8؍اکٹوبر ( سیاست ڈاٹ کام) شیوسینا کے صدر ادھو ٹھاکرے نے اپنی پارٹی کی حلیف حکمراں جماعت بی جے پی کو حکومت مہاراشٹرا استعفیٰ دیتے ہوئے وسط مدتی انتخابات کا سامنا کرنے کا چیلنج کیا ہے ۔ ٹھاکرے نے وزیراعظم مودی پر گجرات میں اسمبلی انتخابات کیلئے مہم چلانے پر بھی تنقید کی ۔ ناندیڑ میں ایک انتخابی ریلی سے خطاب کرتے ہوئے ادھو ٹھاکرے نے کہاکہ میں آپ (بی جے پی ) کو چیلنج کرتا ہوں کہ حکومت سے مستعفی ہو کر پھر ایک مرتبہ انتخاب کا سامنا کریں ۔ ہم آپ کو شیوسینا کی طاقت بتائیں گے ۔ حتی کہ جب بی جے پی کی لہر چل رہی تھی اس وقت بھی بی جے پی نے شیوسینا کے نام پر ووٹ لی تھی ۔ ناندیڑ ۔ واگھالا میونسپل کارپوریشن کیلئے 11 ؍ اکٹوبر کو رائے دہی ہوگی ۔ ٹھاکرے نے بظاہر مودی کے بیرونی دوروں کو طنز و تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے کہا کہ لوگ اب سوشیل میڈیا پر یہ لطیفہ پوسٹ کر رہے ہیں کہ ہندوستان کے وزیراعظم بہت جلد ہندوستان کا دورہ کرنے والے ہیں ۔ ادھو ٹھاکرے نے کہا کہ ’میں ٹیلی ویژن پر نیوز دیکھا رہا تھا ۔ دیکھا کہ وزیراعظم گجرات کیلئے انتخابی مہم چلا رہے ہیں جو دو ماہ بعد ہوں گے ۔ آیا کس طرح انہیں تین سال اقتدار میں رہنے کے بعد اچانک آج اپنا اسکول یاد آگیا ۔ کیا انہیں اس سے پہلے کبھی اپنے اسکول کا دورہ کرنے کا خیال نہیں آیا اورآیا تو صرف انتخابات سے عین قبل کیوں یہ خیال آیا‘ ادھو ٹھاکرے نے مودی پر طنز و تنقید کا سلسلہ جاری رکھتے ہوئے کہا کہ آپ (وزیراعظم) یہ اعلان کر رہے ہیں کہ جی ایس ٹی شرح کم کرتے ہوئے آپ نے عوام کو دیوالی کا تحفہ دیا ہے یہاں ناندیڑ آئیے اور کسانوں کے گھر جائیں ‘‘ ۔ آپ جان جائیں گے کہ آیا یہ ان کی دیوالی ہے یا دیوالیہ (غریبی ) ہے ۔

 

TOPPOPULARRECENT