Saturday , December 16 2017
Home / Top Stories / حکومت نئے صارفین تحفظ قانون کو وضع کرنے میں مصروف: وزیراعظم

حکومت نئے صارفین تحفظ قانون کو وضع کرنے میں مصروف: وزیراعظم

گمراہ کن اشتہارات کے خلاف کارروائی، مؤثر طریقہ سے عوامی شکایات کے ازالہ کیلئے اقدامات
نئی دہلی 26 اکٹوبر (سیاست ڈاٹ کام) وزیراعظم نریندر مودی نے آج کہاکہ حکومت کی جانب سے ایک نیا صارفین تحفظ قانون لایا جارہا ہے جس کی مدد سے گمراہ کن اشتہارات کے خلاف کارروائی کی جائے گی اور وقت مقرر کے اندر عوامی شکایات کے ازالہ کے لئے مؤثر اقدامات کئے جائیں گے۔ اس بات کو یقینی بنایا جائے گا کہ عوام گمراہ کن اشتہارات سے کوئی دھوکہ دہی کا شکار نہ ہوں۔ انھوں نے یہ بھی کہاکہ حکومت نے نیا جی ایس ٹی قانون لاگو کیا ہے جو طویل مدت تک صارفین کے لئے فائدہ مند ہوگا اور قیمتیں کم ہوں گی کیوں کہ مینوفیکچررس کے درمیان مسابقت بڑھے گی تو قیمتی کم ہوجائیں گی۔ آج ہم ایک نیا صارفین تحفظ قانون وضع کرنے پر کام کررہے ہیں۔ قانون تجارت کے لئے انجام دی جانے والی دھاندلیوں کو پیش نظر رکھ کر ملک میں جن چیزوں کی ضرورت ہے اس پر عمل کیا جائے گا۔ مجوزہ قانون میں صارفین کو بااختیار بنایا جارہا ہے۔ گمراہ کن تشہیر اور اشتہار بازی کے خلاف سخت ترین دفعات نافذ کئے جارہے ہیں۔ مرکزی صارفین تحفظ اتھاریٹی اپنے عاملہ اختیارات کے ساتھ کام کرے گی اور فوری ازالہ اقدام کے طور پر کارروائی کرے گی۔ حکومت اس نئے قانون کو بہت جلد لائے گی اس کی جگہ صارفین تحفظ قانون 1986 ء کو تبدیل کیا جائے گا جو نظرثانی شدہ 2015 کے اقوام متحدہ رہنمایانہ خطوط کے تابع ہوگا۔ جس میں صارفین کے تحفظ پر خاص توجہ دی گئی ہے۔

وزیراعظم نریندر مودی نے کہاکہ صارفین کے مفادات کا تحفظ کرنا حکومت کی اولین ترجیح ہے اور یہ قانون نئے ہندوستان کے ہمارے نظریہ کی عکاسی بھی کرے گا۔ صارفین تحفظ کو یقینی بناتے ہوئے نیا ہندوستان صارفین کے حق میں بہتر ثابت ہوگا اور صارفین کو خوشحالی نصیب ہوگی۔ وزیراعظم مودی نے اپنی حکومت کے اقدامات کو روشناس کراتے ہوئے کہاکہ گزشتہ 3 سال میں ان کی حکومت نے نیا رئیل اسٹیٹ قانون، نیا بی آئی ایس قانون، اُجولا اسکیم، ڈی بی آئی (راست منافع کی منتقلی) پروگرام شروع کئے ہیں۔ اس سے نہ صرف صارفین کو اختیارات کو قوت حاصل ہوگی بلکہ اس کے نتیجہ میں بھاری بچت بھی ہوگی۔ صارفین کا تحفظ حکومت کی اہم ترجیحات میں سے ایک ہے۔ انھوں نے مزید کہاکہ ان کی حکومت نے حال ہی میں گڈس اینڈ سرویس ٹیکس کو نافذ کیا ہے جو ملک بھر میں نیا تجارتی ماحول اور کلچر لارہا ہے۔ دیرپا طور پر جی ایس ٹی سے صرف اور صرف صارفین کو ہی فائدہ ہوگا کیوں کہ اب صارفین بھی اس قانون کے تعلق سے زیادہ سے زیادہ واقف کار ہوں گے۔ مودی نے یہ بھی کہاکہ جی ایس ٹی سے کمپنیوں میں ایک دوسرے سے سبقت لے جانے کا حوصلہ بھی ملے گا جس کے نتیجہ میں اشیاء کی قیمتیں گرجائیں گی اور غریب و متوسط طبقہ کے صارفین کو فائدہ حاصل ہوگا۔ اشیاء کی منتقلی میں وقت کی بچت سے بھی قیمتوں میں کمی آئے گی اور اس کا راست فائدہ صارفین کو ہوگا۔ جی ایس ٹی کے باعث نئی بالواسطہہ اور خفیہ ٹیکسوں کو ختم کیا جائے گا۔ اس جی ایس ٹی کے سب سے بڑے استفادہ کنندگان میں صارفین اور متوسط طبقہ کے لوگ ہوں گے۔ گزشتہ 3 سال کے دوران افراط زر میں غیرمعمولی طور پر کمی آئی ہے اس سے ساصرفین کو بچت میں مدد بھی مل رہی ہے۔

TOPPOPULARRECENT