Tuesday , December 18 2018

حکومت نے خودکشی کرنے والے کسی کسان کو پرسہ نہیں دیا

پداپلی میں سابق ایم پی پونم پربھاکر کی پریس کانفرنس

پداپلی ۔ /15 مئی (سیاست ڈسٹرکٹ نیوز) مایوسی کی حالت میں پریشانی میں مبتلا کسان خودکشی کرنے پر چیف منسٹر کو جاکر انہیں پرسہ تعزیتی اور حوصلہ افزائی دلانے کی بھی کے سی آر کو فرصت نہیں ہے ۔ آج ان خودکشی کرنے والے کسانوں کے خاندان انتہائی کسمپرسی کے حالت میں ہیں لیکن حکومت باخبر رہ کر بھی بے خبری کی طرح ہے ۔ سابق ایم پی پونم پربھاکر ٹی پی سی سی ریاستی نائب صدر نے سخت تنقید کرتے ہوئے کیا۔ پداپلی دفتر پر منعقدہ پریس کانفرنس میں کہا کہ حالیہ سی ایم کا حضور آباد میں منعقدہ رعیتو بندھو اسکیم کے جلسہ عام میں حکومت کے کئے گئے اور مستقبل میں کئے جانے والے پروگراموں کے تعلق سے کچھ نہیں کہا ۔ صرف کانگریس پارٹی پر الزامات لگاتے ہوئے جلسہ عام کا انعقاد کیا گیا ہونگا جبکہ ٹی آر ایس دور اقتدار میں آنے کے بعد سے ریاست میں 4 ہزار کسانوں نے خودکشی کرلی ۔ ان کے متعلقہ خاندانوں سے حکومت کا کوئی ایک نمائندہ بھی جاکر پرسہ نہیں دیا ۔ یہ حکومت کا طرز عمل ہے ۔ 128000 ایکر زمین پر چار سال سے مہیلا سنگھموں کو ادا کی جانے والی سود کی رقم بھی ادا نہیں کی گئی ۔ اپنے دور حکومت کو بدعنوانیوں سے پاک صاف کہنے والے ریاستی سیول سپلائیز کے وزیر ایٹالہ راجندر کے اسمبلی حلقہ میں راشن میلرس سنگھم کے قائد غیر مجاز طور پر راشن کے چاول روانہ کرتے ہوئے پکڑ لئے گئے ہیں ۔ دھان کی بھی غیرمجاز منتقلی جاری ہے کیا ان پر مقدمہ نہ کئے جانے پر متعلقہ عہدے داروں پر کیوں کارروائی نہیں کی گئی ۔ اس پریس کانفرنس میں ٹی پی سی سی کی خصوصی دعوت پر شرکت کونے والے گنلا سونیا ریڈی ٹی پی سی سی سکریٹری پی کے ریڈی و دیگر قائدین شریک تھے ۔

TOPPOPULARRECENT