Tuesday , January 23 2018
Home / اضلاع کی خبریں / حکومت پر اقلیتوں کو ہتھیلی میں جنت دکھانے کا الزام

حکومت پر اقلیتوں کو ہتھیلی میں جنت دکھانے کا الزام

کوہیر /19 مئی ( سیاست ڈسٹرکٹ نیوز ) چیف منسٹر کے چندرا شیکھر راؤ نے اپنے انتخابی وعدوں کو یکسر فراموش کردیا ہے اور ریاست تلنگانہ کے مسلم اقلیتوں کو ہتھیلی میں جنت دیکھا رہے ہیں ۔ انہوں نے سوال کیا ہے کہ کیا ہوا مسلمانوں کو 12 فیصد تحفظات کا کتنے بے روزگاری کو روزگار دیا گیا کتنے تعلیم یافتہ بے روزگار مسلمانوں کو نوکریاںدی گئی ۔ کیوں مسل

کوہیر /19 مئی ( سیاست ڈسٹرکٹ نیوز ) چیف منسٹر کے چندرا شیکھر راؤ نے اپنے انتخابی وعدوں کو یکسر فراموش کردیا ہے اور ریاست تلنگانہ کے مسلم اقلیتوں کو ہتھیلی میں جنت دیکھا رہے ہیں ۔ انہوں نے سوال کیا ہے کہ کیا ہوا مسلمانوں کو 12 فیصد تحفظات کا کتنے بے روزگاری کو روزگار دیا گیا کتنے تعلیم یافتہ بے روزگار مسلمانوں کو نوکریاںدی گئی ۔ کیوں مسلمانوں سے جھوٹے وعدے کئے گئے ۔ ان خیالات کا اظہار ڈاکٹر جے گیتا ریڈی سابقہ ریاستی وزیر و رکن اسمبلی ظہیرآباد نے کوہیر منڈل کے موضع دیگلور میں ایک ہفتہ واری بازار اور دو واٹر پمپ سیٹ کے اختتام کے موقع پر دیگوال میں واقع پٹیل گارڈن فنکشن ہال میں کانگریس پارٹی قائدین کو مخاطب کرتے ہوئے کیا ۔ انہوں نے کانگریس پارٹی ہی وہ واحد پارٹی ہے جو مسلمانوں کی حقیقی ہمدرد ہے ۔ کانگریس پارٹی نے مسلمانوں سے جو وعدے کئے تھے اس کو پورا کیا ہے ۔ 4 فیصد تحفظات کا اعلان کیا تھا اس کو پورا کیا ۔ آج جس کی وجہ سے ملسم بچے ڈاکٹر یا پھر انجینئیر بن کر نکل رہے ہیں کانگریس دور اقتدار میں مستحق کو وظیفہ سے محروم نہیں کیا گیا تھا ۔ آج ٹیح آر ایس حکومت میں سیکڑوں ککی تعداد میں اپاہچ معذور بیواؤں عمر رسیدہ افراد آسرا اسکیم کے تحت دئے جانے والے وظیفہ سے محروم ہیں اور ریاست تلنگانہ میں مختصر سے قلیل مدت میں 900 کسانوں نے خودکشی کرلی ۔ کسانوں کو بینکوں کے قرضہ جات قسطوں میں دیا جارہا ہے ۔ جس کی وجہ سے کسان پریشان ہال ہیں جبکہ کانگریس پارٹی نے ہر ایک وقت میں کسانوں کے قرضہ جات معاف کردئے تھے اور دوبارہ کسانوں قرضہ جات حاصل ہوئے تھے ۔ اس کے علاوہ حلقہ اسمبلی ظہیرآباد میں ترقیاتی و تعمیراتی کام انجام دئے گئے ۔ چوراستہ پر 12 کروڑ کی لاگت سے ہوٹل منیجمنٹ کا قیام نیالکل منڈل میں یونیورسٹی کا قیام کویلی سڑک پر تاریخی پل کی تعمیر جس کیلئے 4 کروڑ روپئے منظور کئے گئے گاؤں گاؤں میں سی سی سڑکیں تعمیر کی گئی سماج کے ہر طبقہ میں خوشحالی تھی ۔ انہوں نے نائب صدر آن انڈیا کانگریس پارٹی راہول گاندھی کے کسان بھروسہ یاترا کامیاب یاترا قرار دیا ۔ انہوں نے نریندر مودی حکومت پر تنقید کرتے ہوئے کہا کہ چار دن کی چاندنی ہے پھر اندھیرا ہوجائے گا ۔ ہندوستان ایک سیکولر ملک ہے یہاں پر ہمہ اقسام کے مذہب کے ماننے والے لوگ مل جولکر زندگی گذارتے ہیں ۔ ہندوستان ہندو نہیں بلکہ تمام مذہب کے ماننے والوں کا ہے انہوں نے کہا ہندوستان کو ہندو راشٹرا بنانے کا خواب دیکھنا چھوڑ دیں ۔کوہیر ہوگا ملک کو مذہب کے نام پر تقسیم کرنے کی کوشش کو ہرگز برداشت نہیں کیا جائے گا ۔ اس موقع پر کوہیر منڈل کانگریس آئی صدر اروند ریڈی ، محمد شمشیر علی ، کوہیر ٹاون صدر راجہ داس دیگوال سرپنچ رام لنگاریڈی سابق سرپنچ محمد عبدالستار کوہیر ڈپٹی سرپنچ محمد اشرف علی کوآپشن ممبر کوہیر منڈل ، محمد ارشد علی یوتھ لیڈر ملک ارجن پاٹل سرپنچ وینکٹاپور ، سید رئیس الدین ، محمد فردوس ، محمد مرتضی پٹیل ، سید ریاض الدین ،ضلع پریشد رکن شرونتی اروندی ریڈی ، سرینواس گوڑ ، ایم پی ٹی سی دیگوال کے علاوہ کاگنریس پارٹی سیکڑوں قائدین موجود تھے ۔

TOPPOPULARRECENT