Friday , December 15 2017
Home / شہر کی خبریں / حکومت ‘ چیف کمشنر لینڈ اڈمنسٹریشن کے تقرر میں ناکام

حکومت ‘ چیف کمشنر لینڈ اڈمنسٹریشن کے تقرر میں ناکام

اراضیات کا سروے کس طرح ممکن ہوگا ؟۔ ریاستی سی پی آئی کا سوال
حیدرآباد ۔ 26 ۔ ستمبر : ( سیاست نیوز ) : تلنگانہ سی پی آئی نے اراضیات سروے کے تعلق سے حکومت کے اقدامات کو ہدف ملامت بنایا اور دریافت کیا کہ حکومت چیف کمشنر لینڈ اڈمنسٹریشن کمشنر کے عدم تقرر کے باوجود کس طرح تمام اراضیات کا سروے کروائیگی ۔ کمشنر چیف کمشنر لینڈ اڈمنسٹریشن کا عہدہ طویل عرصہ سے مخلوعہ ہے ۔ اس عہدے پر کسی موزوں اعلیٰ عہدیدار کا تقرر کئے بغیر ریاست میں اراضیات کا سروے کس حد تک ممکن ہوسکے گا ؟ اخباری نمائندوں سے بات کرتے ہوئے مسٹر سی ایچ وینکٹ ریڈی سکریٹری سی پی آئی تلنگانہ نے یہ بات کہی اور کہا کہ حکومت نے زرعی پالیسی مرتب کرنے کا اعلان کیا تھا لیکن آج تک زرعی پالیسی مرتب نہیں کرسکی ۔ وینکٹ ریڈی نے ٹریکٹر اسکیم کا تذکرہ کرتے ہوئے کہا کہ حکومت ٹریکٹر اسکیم کے تحت صرف ٹی آر ایس کارکنوں کو ٹریکٹرس فراہم کر رہی ہے ۔ عام آدمی کو ٹریکٹر اسکیم کے ذریعہ کوئی فائدہ حاصل نہیں ہورہا ہے ۔ انہوں نے کہا کہ زرعی آلات کی خریدی کیلئے حکومت نے رعایت دینے کے مقصد سے 416 کروڑ روپئے مختص کی ہے لیکن اب تک ان 416 کروڑ روپیوں میں صرف 56 کروڑ روپئے جاری کئے گئے ۔ انہوں نے دریافت کیا کہ صرف 56 کروڑ روپیوں کے کتنے کسان استفادہ کرسکیں گے ۔ انہوں نے اس تعلق سے فوری وضاحت کرنے کا حکومت سے مطالبہ کیا ۔۔

TOPPOPULARRECENT