Saturday , December 16 2017
Home / ہندوستان / حکومت کو عملی اقدام کرنا ہوگا جیوتردتیہ سندھیا، مرکزی وزیر سے منسوب بیان غلط : راجیو پرتاپ روڈی

حکومت کو عملی اقدام کرنا ہوگا جیوتردتیہ سندھیا، مرکزی وزیر سے منسوب بیان غلط : راجیو پرتاپ روڈی

نئی دہلی ۔ 7 ڈسمبر (سیاست ڈاٹ کام) کانگریس ارکان پارلیمنٹ نے آج راہول گاندھی کی زیرقیادت مرکزی وزیر وی کے سنگھ کی برطرفی کا مطالبہ کرتے ہوئے پارلیمنٹ ہاؤس کے باہر احتجاجی مظاہرہ کیا۔ مرکزی وزیر کے دلتوں کے بارے میں کئے گئے ریمارکس کے خلاف یہ احتجاج کیا گیا۔ راجیہ سبھا میں قائد اپوزیشن غلام نبی آزاد، لوک سبھا میں کانگریس لیڈر ملک ارجن کھرگے، پارٹی قائدین آنند شرما، دپیندر ہوڈا اور دیگر کئی اس احتجاج میں شریک تھے جو لوک سبھا اور راجیہ سبھا کی کارروائی شروع ہونے سے کچھ دیر قبل کیا گیا۔ بعدازاں ذرائع ابلاغ کے نمائندوں سے بات چیت کرتے ہوئے کانگریس لیڈر جیوتر دتیہ سندھیا نے کہا کہ ہم نے مرکزی وزیر کے ایک مخصوص طبقہ بلکہ ساری ہندوستانی برادری کے بارے میں کئے گئے قابل اعتراض ریمارکس کے خلاف یہ احتجاج کیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ حکومت کو اس ضمن میں کارروائی کرنی چاہئے اور صرف زبانی باتوں سے کچھ حاصل ہونے والا نہیں۔ مرکزی وزیر وی کے سنگھ نے اکٹوبر میں یہ تبصرہ کرتے ہوئے ایک ہنگامہ کھڑا کردیا تھا کہ اگر کوئی شخص خود کو بچانے کیلئے کتے پر پتھر برسائے تو اس کیلئے مرکز کو موردالزام قرار نہیں دیا جاسکتا۔ انہوں نے فریدآباد میں ایک دلت کو زندہ نذرآتش کئے جانے کے واقعہ کے پس منظر میں یہ تبصرہ کیا تھا جس پر اپوزیشن نے کافی ہنگامہ آرائی کی اور ان کی برطرفی کا مطالبہ کیا۔ وی کے سنگھ جو مملکتی وزیرخارجہ بھی ہیں، انہیں ہریانہ میں دو دلت بچوں کو زندہ نذرآتش کئے جانے کے بعد حکومت کی بے عملی کے الزامات پر کئے گئے ’’کتے‘‘ کے ریمارکس پر بھی شدید تنقیدوں کا سامنا ہے۔ حکومت کا یہ موقف ہیکہ وی کے سنگھ نے دلتوں کے بارے میں ایسا کوئی تبصرہ نہیں کیا ہے اور اپوزیشن کی جانب سے یہ مسئلہ اٹھائے جانے کی کوئی وجہ نہیں ہے۔ مرکزی وزیر وی کے سنگھ کا دفاع کرتے ہوئے حکومت نے آج اپوزیشن کے الزام کو مسترد کردیا۔ یہ کانگریس کے احتجاج کے بعد ذرائع ابلاغ کے نمائندوں سے بات چیت کرتے ہوئے مرکزی وزیر راجیو پرتاپ روڈی نے کہا کہ وی کے سنگھ کو ایک ایسے بیان کیلئے نشانہ بنایا جارہا ہے جو انہوں نے نہیں کہا تھا۔ انہوں نے کہا کہ راہول جی اچانک نیند سے بیدار ہوتے ہیں اور کچھ نہ کچھ پروگرام شروع کردیتے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ وی کے سنگھ دستور کا احترام کرتے ہیں اور انہوں نے ایسی بات نہیں کی جو ان سے منسوب کی جارہی ہے۔ راہول جی اس مسئلہ کو سیاسی رنگ دینے کی کوشش کررہے ہیں اور افسوسناک پہلو یہ ہیکہ وی کے سنگھ سے وہ بیان منسوب کیا جارہا ہے جو انہوں نے نہیں کہا ۔

TOPPOPULARRECENT