Monday , December 18 2017
Home / ہندوستان / حکومت کی اجازت کے بغیر پتنجلی نوڈلس کی فروخت

حکومت کی اجازت کے بغیر پتنجلی نوڈلس کی فروخت

بابا رام دیو کے خلاف کارروائی کرنے جنتادل متحدہ کا مطالبہ
نئی دہلی ۔ 17 ۔ دسمبر : ( سیاست ڈاٹ کام ) : حکومت کی اجازت کے بغیر نوڈلس اور پاستہ جیسی غذائی اشیاء کی فروخت پر یوگا گرو بابا رام دیو کے خلاف کارروائی کا آج راجیہ سبھا میں مطالبہ کیا گیا ۔ وقفہ صفر کے دوران یہ مسئلہ اٹھاتے ہوئے جنتادل متحدہ کے رکن مسٹر کے سی تیاگی نے حکومت سے دریافت کیا کہ مشہور زمانہ میگی نوڈلس پر عائد تحدیدات کی برخاستگی سے متعلق ممبئی ہائی کورٹ کے حکم کے خلاف سپریم کورٹ میں اپیل کیوں دائر نہیں کی گئی ۔ مذکورہ دونوں کمپنیوں کو نئے دبنگ سے تعبیر کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ غذائی اشیاء میں نقائص کے باوجود کارروائی نہیں کی گئی ۔ انہوں نے الزام عائد کیا کہ پتنجلی نوڈلس اور پاستہ کو فوڈ سیفٹی اینڈ اسٹانڈرڈس اتھاریٹی آف انڈیا سے منظوری کے بغیر فروخت کیا جارہا ہے ۔ مسٹر کے سی تیاگی نے بتایا کہ حکومت اترکھنڈ نے یہ تصدیق کی ہے کہ بابا رام دیو کی فارما کمپنی یہ جھانسہ دیتے ہوئے آیورویدک دوا فروخت کررہی ہے کہ اس کے استعمال سے مرد بچہ پیدا ہوگا ۔ اس کے باوجود کوئی کارروائی نہیں کی گئی ۔ انہوں نے کہا کہ بابا رام دیو اپنے آپ کو وزیر اعظم نریندر مودی کا قریبی ساتھی ظاہر کررہے ہیں اور یہ ادعا کررہے ہیں کہ بی جے پی حکومت کی تشکیل کے لیے تن ، من ، دھن سے اعانت کی ہے۔ انہوں نے استفسار کیا کہ میگی نوڈلس کیس میں ممبئی ہائی کورٹ کا فیصلہ قبول کرلیا گیا لیکن سپریم کورٹ میں اپیل کیوں دائر نہیں کی گئی۔

TOPPOPULARRECENT