Monday , November 20 2017
Home / ہندوستان / حکومت کی خاموشی سے شرپسندوں کے حوصلے بلند

حکومت کی خاموشی سے شرپسندوں کے حوصلے بلند

رام دیو اور فڈ نویس کے خلاف کارروائی کرنے شاہی امام کا مطالبہ
نئی دہلی۔/8اپریل، ( فیکس ) شاہی امام مسجد فتحپوری مفتی محمد مکرم احمد نے آج نماز جمعہ سے قبل خطاب میں کہا کہ اسلام ایک کامل اور مکمل مذہب ہے جس میں ہر شخص کے لئے مکمل ہدایت موجود ہے۔ خوش اخلاقی،صبر وتحمل اور رواداری کو پسند کیا گیا ہے۔میانہ روی اور صبر و نماز کے ساتھ ہر مسئلہ کا حل تلاش کیا جائے۔ شاہی امام نے مرکزی حکومت سے اپیل کی کہ بے مطلب کی بے تکی بیان بازی کو بند کرایا جائے ۔ پچھلے تقریباً دیڑھ سال سے کچھ لیڈر فرقہ پرستی پھیلاکر ملک کے امن وامان کو برباد کرنا چاہتے ہیں ان کو حکومت کی ناراضگی کا کوئی خوف نہیں ہے ، دوسرے لفظوں میں اگر کہا جائے کہ غیر آئینی اور غیر قانونی فضول باتوں کی اصل وجہ حکومت کی خاموشی ہے۔انہوں نے کہا کہ رام دیو اور چیف منسٹر مہاراشٹرا فڈ نویس نے جو بیان دیئے ہیں ان پر وزیر اعظم اور وزیر داخلہ کو ایکشن لینا چاہیئے۔انہوں نے کہا کہ بلول کے قریب ایک گاڑی میں غیر ممنوعہ جانوروں کی باقیات لے کر ایک ڈرائیور اور ایک شخص فیکٹری کی طرف جارہے تھے کہ شرپسندوں نے ان پر اچانک حملہ کردیا حالانکہ یہ معمول کا عمل تھا کسی ممنوعہ جانور کا کوئی مسئلہ نہیں تھا۔ اس طرح کے واقعات بار بار پیش آرہے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ این آئی اے کے عہدیدار تنزیل احمد کی ہلاکت بھی افسوسناک اور شدید تعجب کی بات ہے۔ قاتلوں کے خلاف مرکزی حکومت سخت کارروائی کرے اور ریاستی حکومتیں بھی اقلیتوں کے تحفظ کو یقینی بنائیں۔ شاہی امام نے مرکزی حکومت سے اپیل کی کہ علی گڑھ مسلم یونیورسٹی کو اقلیتی درجہ دیا جائے ۔

TOPPOPULARRECENT