Tuesday , November 21 2017
Home / شہر کی خبریں / حکومت کی سبسیڈی قرض اسکیم پر عمل آوری کی اجازت

حکومت کی سبسیڈی قرض اسکیم پر عمل آوری کی اجازت

ایک تا دو لاکھ قرض کی درخواستوں کی یکسوئی پر توجہ ، سکریٹری اقلیتی بہبود کے احکامات
حیدرآباد۔/5مئی، ( سیاست نیوز) حکومت نے اقلیتی فینانس کارپوریشن کو سبسیڈی سے مربوط قرض کی اجرائی اسکیم پر عمل آوری کی اجازت دے دی ہے۔ کارپوریشن سے کہا گیا ہے کہ وہ پہلے مرحلہ میں ایک تا 2لاکھ روپئے تک کی قرض کی درخواستوں کی یکسوئی پر توجہ دے تاکہ چھوٹے کاروبار کرنے والوں کو فائدہ ہو۔ سکریٹری اقلیتی بہبود سید عمر جلیل نے آج اس سلسلہ میں کارپوریشن کو باقاعدہ احکامات جاری کئے ہیں۔ انہوں نے بتایا کہ بڑی تعداد میں درخواستوں کی وصولی سے اسکیم کے آغاز میں تاخیر ہوئی ہے کیونکہ کارپوریشن نے جو نشانہ مقرر کیا ہے وہ درخواستوں سے کافی کم ہے۔ کارپوریشن کو اس اسکیم کے تحت 8153 افراد کو سبسیڈی اور قرض فراہم کرنے کا نشانہ دیا گیا ہے جبکہ موصولہ درخواستیں ایک لاکھ 51 ہزار سے زائد ہیں۔ اس اسکیم میں قرض اور سبسیڈی کی حد میں اضافہ کیا گیا اور کارپوریشن 5 لاکھ تک سبسیڈی فراہم کرسکتا ہے۔ زائد سبسیڈی کی گنجائش کے پیش نظر ریاست بھر سے بڑی تعداد میں درخواستیں داخل کی گئیں۔ سکریٹری اقلیتی بہبود نے کہا کہ اسکیم کے آغاز کے سلسلہ میں مختلف گوشوں سے نمائندگیاں وصول ہوئیں جس پر کارپوریشن کو ہدایت دی گئی کہ وہ درخواستوں میں ایک لاکھ روپئے قرض سے متعلق درخواستوں کو علحدہ کرلے اور ان کی پہلے یکسوئی کی جائے۔ انہوں نے کہا کہ اسکیم پر عمل آوری میں مزید تاخیر مناسب نہیں ہے لہذا ایک تا 2 لاکھ روپئے تک کے قرض کی اجرائی کا عمل جلد ہی شروع کیا جائے گا۔ حکومت سے اس بات کی اجازت حاصل کی جارہی ہے کہ مقررہ نشانہ میں اضافہ ہو اور اس اسکیم کیلئے بجٹ میں بھی اضافہ کیا جائے۔ توقع ہے کہ اقلیتی فینانس کارپوریشن اندرون ایک ہفتہ ایک تا 2 لاکھ روپئے کی درخواستوں کو علحدہ کرلے گا۔ اسکیم پر عمل آوری سے قبل ہی بعض گوشوں کی جانب سے امیدواروں کو پروسیڈنگ لیٹرس جاری کردیئے گئے ۔ درمیانی افراد اور کارپوریشن کے بعض اندرونی ملازمین کی ملی بھگت سے یہ لیٹرس جاری کئے گئے جن کی کوئی اہمیت نہیں ہے۔ کارپوریشن نے اس بات کی وضاحت کردی کہ پروسیڈنگ لیٹر کو درخواست کی منظوری نہ سمجھا جائے۔ اس اسکیم کیلئے سب سے زیادہ درخواستیں حیدرآباد اور رنگاریڈی سے داخل ہوئی ہیں۔ اسی دوران اقلیتی فینانس کارپوریشن نے 2014-15 میں سبسیڈی اسکیم کے تحت ابھی تک اپنا نشانہ مکمل نہیں کیا ہے۔ اطلاعات کے مطابق حکومت نے 2014-15 کیلئے 8240 افراد کو سبسیڈی کی اجرائی کا نشانہ الاٹ کیا تھا اور ابھی تک کارپوریشن کی جانب سے 8142 افراد کو سبسیڈی جاری کردی گئی اور 3602 افراد نے ہی درخواست کے مطابق کاروبار کا آغاز کیا ہے۔

TOPPOPULARRECENT