Friday , December 15 2017
Home / شہر کی خبریں / حکومت کی مجوزہ سستی شراب پالیسی پر اپوزیشن کی تنقیدیں مسترد

حکومت کی مجوزہ سستی شراب پالیسی پر اپوزیشن کی تنقیدیں مسترد

شراب محاصل میں تخفیف کا ادعا ، وزیر آبکاری ٹی پدما راؤ
حیدرآباد ۔ 24 ۔ اگست : ( آئی این این) : وزیر آبکاری تلنگانہ مسٹر ٹی پدما راؤ نے کہا کہ حکومت کی مجوزہ نئی آبکاری پالیسی کے تحت سستی شراب کی سربراہی کو اپوزیشن جماعتیں متنازعہ بنا رہی ہیں ۔ انہوں نے آج یہاں سکریٹریٹ میں اخباری نمائندوں سے بات چیت کرتے ہوئے کہا کہ غیر قانونی شراب ( گڑمبہ ) سے کئی افراد کی صحت پر مضر اثرات مرتب ہورہے ہیں ۔ اور قیمتی جانوں کو نقصان پہنچ رہا ہے ۔ وزیر آبکاری نے بتایا کہ چیف منسٹر کے چندر شیکھر راؤ نے گڑمبہ کے بجائے سستی شراب فراہم کرنے کی تجویز تیار کرلی ہے ۔ انہوں نے اپوزیشن جماعتوں کی تنقیدوں کو مسترد کرتے ہوئے کہا کہ اپوزیشن جماعتیں حکومت پر یہ الزام لگا رہی ہیں سستی شراب کو کرانہ دکانات میں بھی فروخت کرنے کی سہولت فراہم کی جائے گی ۔ اس پر انہوں نے اپوزیشن کے نظریات اور خیالات کو بے بنیاد قرار دیا ۔ مسٹر ٹی پدما راؤ نے حکومت کی مجوزہ سستی شراب کی سربراہی پر کہا کہ اس کا مقصد عوام کو اچھی صحت کی برقراری میں مدد کرنا ہے کیوں کہ غیر مجاز شراب کے استعمال سے عوام کی صحت پر منفی اثرات مرتب ہورہے ہیں ۔ وزیر آبکاری نے اس بات کی وضاحت کی کہ حکومت نے ہر ایک لکر باکس پر ٹیکس کو 1800 سے گھٹا کر 700 روپئے کردیا ہے تاکہ اس کے معیار میں اضافہ ہوسکے ۔ حکومت کی سستی شراب پر کہا کہ یہ شراب ریگولر ہی رہے گی ۔ اس میں کسی قسم کا کوئی نیا برانڈ نہیں ہوگا ۔ تاہم یہ گڑمبہ سے بہتر ثابت ہوگی ۔

TOPPOPULARRECENT