Tuesday , December 12 2017
Home / شہر کی خبریں / حیدرآباد سنٹرل یونیورسٹی طلبا و اساتذہ کی جیل میں بھوک ہڑتال : کنہیا

حیدرآباد سنٹرل یونیورسٹی طلبا و اساتذہ کی جیل میں بھوک ہڑتال : کنہیا

حیدرآباد /25 مارچ ( سیاست نیوز ) چرلہ پلی سنٹرل جیل میں قید حیدرآباد سنٹرل یونیورسٹی طلبہ و اساتذہ نے جیل میں بھوک ہڑتال کا آغاز کردیا ہے ۔ صدر جواہر لال نہرو یونیورسٹی طلبہ تنظیم کنہیا کمار نے آج ٹویٹر پر جاری کردہ اپنے ایک پیام میں یہ بات بتائی ۔ انہوں نے بتایا کہ انہیں موصولہ اطلاعات کے مطابق حیدرآباد سنٹرل یونیورسٹی سے 22 مارچ کی رات دیر گئے گرفتار شدہ طلبہ و اساتذہ جو چرلہ پلی سنٹرل جیل میں ہے ان طلبہ و اساتذہ نے اپنے احتجاج میں شدت پیدا کرنے کیلئے جیل میں ہی بھوک ہڑتال شروع کردی ہے ۔ کنہیا کمار نے بھوک ہڑتالی طلبہ و اساتذہ سے اظہار یگانگت کرتے ہوئے کہا کہ طلبہ کی جانب سے شروع کردہ تحریک پر جو ردعمل حاصل ہو رہا ہے اس سے حکومت خوف زدہ ہے ۔ ٹویٹر پر جاری کردہ پیام میں کنہیا کمار نے جو اطلاع دی ہے وہ تیزی سے ساتھ سوشیل میڈیا پر پھیلنے لگی اور یونیورسٹی میں احتجاج کر رہے طلبہ نے بھی احتجاج میں شدت پیدا کرنے کا اعلان کردیا ہے ۔ بتایا جاتا ہے کہ حیدرآباد سنٹرل یونیورسٹی میں جاری احتجاج کے پیش نظر پولیس کی تعیناتی پر بھی طلبہ نے شدید اعتراض کیا ہے ۔ یونیورسٹی احاطہ میں بیرونی افراد کو داخل ہونے نہ دئے جانے کے سبب اندرونی صورتحال سے تفصیلی آگاہی دشوار ہوتی جارہی ہے لیکن احتجاجی طلبہ سوشیل میڈیا کے ذریعہ اپنے موقف کو دنیا کے سامنے پیش کرنے کی بھرپور کوشش کر رہے ہیں ۔ گرفتار شدہ 27 طلبہ و تین اساتذہ کے مقدمہ کے متعلق بتایا جاتا ہے کہ مقامی عدالت نے 28 مارچ کو گرفتار شدگان کی ضمانت کیلئے داخل کردہ عرضی پر سنوائی کا فیصلہ کیا ہے ۔

TOPPOPULARRECENT