Wednesday , August 15 2018
Home / شہر کی خبریں / حیدرآباد شہر میں ملیریا ، ڈینگو اور وائرل فیور کا اعتراف

حیدرآباد شہر میں ملیریا ، ڈینگو اور وائرل فیور کا اعتراف

ملک میں وبائی امراض کے تلنگانہ پر بھی اثرات :وزیر صحت لکشما ریڈی
حیدرآباد ۔15۔ نومبر (سیاست نیوز) وزیر صحت ڈاکٹر لکشما ریڈی نے اعتراف کیا کہ گریٹر حیدرآباد کے حدود میں ملیریا ، ڈینگو اور وائرل فیور کے واقعات میں اضافہ ہوا ہے۔ کونسل میں وقفہ سوالات کے دوران ایم ایس پربھاکر راؤ اور دوسروں کے سوال کے جواب میں وزیر صحت نے بتایا کہ ملک بھر میں وبائی امراض میں اضافہ کا رجحان ہے اور تلنگانہ ریاست بھی اسی کے تحت متاثر ہے۔ انہوں نے بتایا کہ محکمہ صحت کی چوکسی اور خانگی ہاسپٹل سے بہتر تال میل کے ذریعہ وبائی امراض کے زائد کیسس کا پتہ چلایا گیا۔ انہوں نے کہا کہ مرض کا فوری پتہ چلانے اور جلد علاج کی صورت میں اموات کو روکا جاسکتا ہے ۔ انہوں نے بتایا کہ مچھروں کی افزائش کو روکنے کیلئے آبادیوں میں مچھر کش ادویات کا چھڑکاؤ کیا جارہا ہے۔ انہوں نے کہا کہ ابھی تک متاثر علاقوں میں 16,300 مکانات کی نشاندہی کرتے ہوئے ان میں مچھر کش ادویات کا چھڑکاؤ کیا گیا۔ انہوں نے بتایا کہ شہر کے مختلف علاقوں میں زائد خصوصی ٹیمیں تشکیل دی گئی ہیں تاکہ وبائی امراض کی روک تھام کی مہم چلائی جاسکے۔ گریٹر حیدرآباد میونسپل کارپو ریشن کو آن لائین ، ایپ ، ای میل ، ٹوئیٹر اور عام افراد اور کارپوریٹرس کی جانب سے ملنے والی شکایات کی فوری یکوئی جارہی ہے ۔ اس مہم میں اسکولی طلبہ کو شامل کیا گیا ہے اور ابھی تک 1369 اسکولوں کا احاطہ کیا گیا۔ وزیر صحت نے بتایا کہ 2014 ء سے آج تک ریاست میں چکن گنیا کے 4466 کیسس مثبت پائے گئے اور 93 افراد کی موت واقع ہوئی۔ انہوں نے کہا کہ گریٹر حیدرآباد کے حدود میں وبائی امراض میں اضافہ ہوا ہے۔ تاہم اموات کی شرح میں کمی واقع ہوئی ہے ۔

 

TOPPOPULARRECENT