Tuesday , November 21 2017
Home / Top Stories / حیدرآباد میں 500 روپیوں کے نئے نوٹس کی اجرائی کا آغاز، اے ٹی ایمس سے نکالنے کی سہولت ، عوام کو کچھ حد تک راحت

حیدرآباد میں 500 روپیوں کے نئے نوٹس کی اجرائی کا آغاز، اے ٹی ایمس سے نکالنے کی سہولت ، عوام کو کچھ حد تک راحت

حیدرآباد ۔ 24 ۔ نومبر : ( سیاست نیوز ) : دو ہفتوں کے انتظار کے بعد 500 روپئے کی نئی نوٹ حیدرآباد پہونچ چکی ہے ۔ فی الحال اے ٹی ایم کے ذریعہ ہی اس کی اجرائی عمل میں لائی جارہی ہے ۔ وزیراعظم نریندر مودی نے 8 نومبر کو 500 اور 1000 روپئے کے نوٹوں کو منسوخ کیا ۔ اس کی جگہ 500 اور 2000 روپئے کی نئی نوٹ جاری کرنے کا اعلان کیا تھا ۔ تاہم 10 سے 23 نومبر تک صرف 2000 کی نئی نوٹ جاری کی گئی تھی ۔ 500 روپئے کی نئی نوٹ جاری نہ ہونے سے عوام اور کاروباری ادارے چلر کے لیے کافی پریشان تھے ۔ تاہم آر بی آئی نے جمعرات سے حیدرآباد اور تلنگانہ کے دیگر شہروں کے لیے 100 کروڑ روپئے مالیت سے متعلق 500 روپئے کی نئی نوٹ جاری کردی ہے ۔ تاہم فی الحال اس کو اے ٹی ایم سے ہی نکالنے کی سہولت فراہم کی گئی ہے ۔ شہر حیدرآباد کے کئی مقامات پر عوام نے اے ٹی ایم سنٹرس سے 500 روپئے کی نئی نوٹ نکال بھی لی ہے ۔ آر بی آئی کے ایک عہدیدار نے بتایا کہ حیدرآباد کے بشمول ریاست کے مختلف اضلاع ہیڈکوارٹرس پر اے ٹی ایم کے سافٹ ویر کو جنگی خطوط پر اپ گریڈ کرنے کی کارروائی جاری ہے ۔ پہلے مرحلے میں 100 کروڑ روپئے مالیت پر مشتمل 500 روپئے کی نئی نوٹ جاری ہوئی ہے ۔ آئندہ ہفتہ تک مزید 500 روپئے کی نئی نوٹ آجائے گی ۔ بہت جلد بنکوں کے ذریعہ بھی نئی 500 روپئے کی نوٹ جاری کی جائے گی ۔ سیف آباد اے ٹی ایم سنٹر سے 500 روپئے کی نئی نوٹ حاصل کرنے والے عوام نے بتایا کہ اچانک بڑی نوٹوں کی منسوخی سے سب کچھ تھم گیا تھا ۔ 2000 روپئے کی نئی نوٹ مارکٹ میں آنے کی خوشی تھی تاہم چلر کی عدم موجودگی سے اس کا چلن بھی دشوار ہوچکا تھا ۔ آج سے 500 روپئے کی نئی نوٹ مارکٹ میں آئی ہے ۔ اس سے کسی حد تک راحت مل سکتی ہے ۔ روزمرہ کی ضروریات کے لیے اس کو استعمال کیا جاسکتا ہے ۔ گذشتہ 15 دن سے 2000 روپئے کا چلر دینے کے لیے پٹرول پمپ چھوٹے کاروبار سے وابستہ افراد اپنی مجبوری کا اظہار کررہے تھے ۔۔

TOPPOPULARRECENT