Wednesday , January 24 2018
Home / کھیل کی خبریں / حیدرآباد کی مایوس کن قیادت کا آج پنجاب کیخلاف سخت امتحان

حیدرآباد کی مایوس کن قیادت کا آج پنجاب کیخلاف سخت امتحان

حیدرآباد ۔ 13 مئی (سیاست نیوز) سن رائزس حیدرآباد کا کل یہاں اپل کے راجیو گاندھی انٹرنیشنل اسٹیڈیم میں کھیلے جانے والے مقابلہ میں ٹورنمنٹ کی طاقتور ٹیم کنگس الیون پنجاب کے خلاف ایک سخت امتحان متوقع ہے۔ حیدرآباد جسے آئی پی ایل کے ساتویں ایڈیشن کے گھریلو میدان میں گذشتہ روز ممبئی انڈینس کے خلاف ناکامی برداشت کرنی پڑی ہے جبکہ ممبئی کی ب

حیدرآباد ۔ 13 مئی (سیاست نیوز) سن رائزس حیدرآباد کا کل یہاں اپل کے راجیو گاندھی انٹرنیشنل اسٹیڈیم میں کھیلے جانے والے مقابلہ میں ٹورنمنٹ کی طاقتور ٹیم کنگس الیون پنجاب کے خلاف ایک سخت امتحان متوقع ہے۔ حیدرآباد جسے آئی پی ایل کے ساتویں ایڈیشن کے گھریلو میدان میں گذشتہ روز ممبئی انڈینس کے خلاف ناکامی برداشت کرنی پڑی ہے جبکہ ممبئی کی بنسبت کنگس الیون پنجاب کی ٹیم ٹورنمنٹ میں زیادہ طاقتور ٹیم بن چکی ہے۔ میزبان ٹیم سن رائزس حیدرآباد کو ناقص قیادت کا کافی نقصان اٹھانا پڑ رہا ہے جیسا کہ ٹیم کے کپتان شکھردھون ٹورنمنٹ میں مسلسل ناکام ہورہے ہیں۔ دھون کے انفرادی مظاہرہ بھی انتہائی ناکام ہونے کے علاوہ بحیثیت کپتان بھی وہ ٹیم کیلئے مثالی فیصلے لینے میں ناکام ہورہے ہیں۔ حیدرآباد کا بیٹنگ شعبہ کپتان کے علاوہ آسٹریلیائی اوپنرس کی جوڑی ڈیویڈ وارنر اور آرون فنچ پر منحصر ہے لیکن آسٹریلیائی جوڑی میں شکھردھون کی بنسبت بہتر مظاہرہ کرتے ہوئے نصف سنچریاں اسکور کی ہیں۔ جیسا کہ ممبئی کے خلاف آرون فنچ نے یہاں نصف سنچری اسکور کی لیکن برق رفتار بیٹنگ کرنے میں وہ ناکام ہورہے ہیں۔

حیدرآباد کا بولنگ شعبہ دنیا کے نمبر ایک فاسٹ بولر ڈیل اسٹین کے علاوہ ہندوستان کے موجودہ کامیاب ترین بولر بھونیشور کمار پر منحصر ہے جبکہ اسپن شعبہ میں امیت مشرا اور کرن شرما کسی قدر بہتر مظاہرہ کررہے ہیں۔ میزبان بولروں کو کل پنجاب کے طاقتور بیٹنگ شعبہ کے خلاف سخت امتحان دینا پڑ سکتا ہے کیونکہ اننگز کے آغاز پر ویریندر سہواگ جہاں مسلسل 30 رنز کی اننگز کھیل رہے تھے وہیں گذشتہ مقابلہ میں انہوں نے کولکتہ نائیٹ رائیڈرس کے خلاف 72 رنز اننگز کھیلتے ہوئے حریف بولروں کیلئے خطرہ کی گھنٹی بجا دی ہے۔ ٹورنمنٹ میں پنجاب کے بیٹسمین میکسول انتہائی خطرناک ثابت ہورہے ہیں جوکہ سب سے زیادہ رنز بنانے والے بیٹسمینوں کی فہرست میں پہلے مقام پر فائز ہے جبکہ میکسول کی ناکامی پر جنوبی افریقی بیٹسمین ڈیوڈ ملر ہمالیائی اسکور کھڑا کرنے میں اپنی ذمہ داری بخوبی نبھا رہے ہیں۔ سہواگ، میکسول اور ملر کے علاوہ ٹیم کے کپتان جارج بیلی بھی حیدرآبادی بولروں کیلئے دردسر ثابت ہوسکتے ہیں۔

ممبئی انڈینس کے خلاف گذشتہ مقابلہ میں یہاں جیمس اینڈرسن نے نئی گیند سے دھون اور فنچ کو پریشان کیا وہیں پنجاب میں سندیپ شرما رواں سیزن ٹیم کیلئے سب سے زیادہ وکٹیں حاصل کرنے والے بولر بننے کے علاوہ آسٹریلیائی فاسٹ بولر مچل جانسن بھی میزبان بیٹنگ شعبہ کو نقصان پہنچا سکتے ہیں۔ حیدرآباد کی سست وکٹ پر مرلی کارتک اور لکشمی پتی بالاجی کا بولنگ مظاہرہ بھی کلیدی ہوسکتا ہے۔ سن رائزس حیدرآباد کو مقامی شائقین کے روبرو کامیابی حاصل کرنی اپنے وقار کے علاوہ ٹورنمنٹ میں باقی رہنے کیلئے ناگزیر ہے۔ کشمیر سے تعلق رکھنے والے ہندوستانی ٹیم کی نمائندگی کا اعزاز حاصل کرتے ہوئے پرویز رسول نے ایک نئی تاریخ رقم کی ہے لیکن اس آل راونڈر کو ٹورنمنٹ میں ہنوز موقع نہیں دیا گیا ہے جس سے ان کے چاہنے والے ہزاروں کرکٹ شائقین کو مسلسل مایوسی ہورہی ہے۔

TOPPOPULARRECENT