Tuesday , December 18 2018

حیدرآباد یونیورسٹی کے دو پروفیسرس کی معطلی برخاست کرنے ٹیچرس فورم کا مطالبہ

حیدرآباد۔ 16 جون (پی ٹی آئی) حیدرآباد یونیورسٹی کے ٹیچرس فورم نے دو فیکلٹی ممبرس کی معطلی غیرمشروط طور پر فوری منسوخ کرنے کا یونیورسٹی حکام سے مطالبہ کیا۔ اسوسی ایٹ پروفیسر وائی کے رتنم اور اسسٹنٹ پروفیسر ٹی سین گپتا منگل سے معطلی کے خلاف غیرمعینہ مدت کی بھوک ہڑتال پر ہیں۔ ایس سی ؍ ایس ٹی فیکلٹی فورم اور متعلقہ ٹیچرس نے آج یونیورسٹی انتظامیہ سے فیکلٹی اور طلبہ کے خلاف درج تمام مقدمات سے دستبردار کا مطالبہ کیا تاکہ کیمپس میں عام حالات بحال ہوسکیں اور تعلیمی مفادات کو نقصان نہ پہونچے۔ فورم نے کہا کہ معطلی کی وجہ سے کیمپس میں صورتحال مزید ابتر ہورہی ہے۔ اس کارروائی کی مذمت کرتے ہوئے کہا گیا کہ یہ جمہوری ادارہ کے قواعد کے مغائر ہے۔ انہوں نے کہا کہ ان دونوں پروفیسرس نے 22 مارچ کو صرف پولیس سے یہ اپیل کی تھی کہ طلباء پر ظلم نہ کیا جائے اور اسی بناء پر یونیورسٹی نے ان دو پروفیسر کو معطل کردیا ہے۔ یہ بات درست ہے کہ اگر کوئی ملازم 48 گھنٹے سے زائد تحویل میں رہے تو اسے معطل کیا جاسکتا ہے لیکن ان قواعد کا اطلاق ہر طرح کی صورتحال پر نہیں ہوتا۔ یونیورسٹی حکام نے کل کہا تھا کہ مقررہ قاعدہ کے تحت ان دو پروفیسرس کو معطل کیا گیا ہے۔

Top Stories

TOPPOPULARRECENT