Sunday , November 18 2018
Home / شہر کی خبریں / حیدرآباد میں سعودی کونسلیٹ کے قیام میں پیشرفت

حیدرآباد میں سعودی کونسلیٹ کے قیام میں پیشرفت

غیر مقیم ہندوستانیوں کی بھلائی کے لیے 100کروڑ مختص، اے کے خاں سے این آر آئی تنظیموں کے نمائندوں کی ملاقات
حیدرآباد۔19 مارچ (سیاست نیوز) حیدرآباد میں سعودی کونسلیٹ کے قیام کی کوششوں میں پیشرفت ہوئی ہے اور تلنگانہ حکومت نے اس سلسلہ میں وزارت خارجہ کے عہدیداروں سے بات چیت کی ہے۔ حکومت کے مشیر برائے اقلیتی امور اے کے خان نے خلیجی ممالک سے تعلق رکھنے والے این آر آئیز کے نمائندہ وفد سے ملاقات کے دوران اس بات کا انکشاف کیا۔ سعودی عرب اور دیگر ممالک سے تعلق رکھنے والے غیر مقیم ہندوستانیوں کی مختلف تنظیموں کے نمائندوں نے اے کے خان سے ملاقات کی اور خلیج کی موجودہ صورتحال کے پس منظر میں تلنگانہ حکومت کے اقدامات پر بات چیت کی۔ تلنگانہ حکومت نے غیر مقیم ہندوستانیوں کی بھلائی کے سلسلہ میں بجٹ 2018-19ء میں 100 کروڑ روپئے مختص کیے ہیں۔ غیر مقیم ہندوستانیوں کے نمائندوں نے اے کے خان سے خواہش کی کہ وہ موجودہ صورتحال کے پس منظر میں چیف منسٹر کے چندر شیکھر رائو کو غیر مقیم ہندوستانیوں کی بھلائی کے اقدامات کے سلسلہ میں توجہ دلائیں۔ ایسے ورکرس جو واپسی کے خواہاں ہیں ان کی واپسی کا انتظام کیا جائے۔ اس کے علاوہ وطن واپس ہونے والوں کے لیے حکومت کی سطح پر اسکیمات تیار کی جائیں۔ اے کے خاں نے کہا کہ حیدرآباد میں سعودی کونسلیٹ کے قیام کے سلسلہ میں چیف منسٹر کے چندر شیکھر رائو نے وزیراعظم نریندر مودی کو مکتوب روانہ کیا اور اس کارروائی میں پیشرفت ہوئی ہے۔ انہوں نے کہا کہ وزارت خارجہ کے عہدیداروں سے بھی اس سلسلہ میں بات چیت کی گئی۔ اے کے خان نے امید ظاہر کی کہ بہت جلد حیدرآباد میں سعودی کونسلیٹ کے قیام کو منظوری حاصل ہوجائے گی۔ کونسلیٹ کے قیام سے نہ صرف تلنگانہ بلکہ مہاراشٹرا اور کرناٹک کے سابق ریاست حیدرآباد کے علاقوں کے عوام کو فائدہ ہوگا۔ انہوں نے کہا کہ این آر آئیز کی تنظیموں نے جن مسائل کی سمت توجہ مبذول کرائی ہے وہ اس سلسلہ میں وزیر این آر آئی امور کے ٹی آر سے بات چیت کریں گے۔ تلنگانہ حکومت واپس ہونے والے ورکرس اور دوسروں کے مسائل پر توجہ مبذول کرے گی۔ انہوں نے حکومت کی جانب سے این آر آئی بھون کی تعمیر کے فیصلے سے واقف کرایا۔ اس کے علاوہ این آر آئیز کی کمیٹی بھی تشکیل دینے پر غور کیا جارہا ہے۔ تنظیموں کے نمائندوں نے بجٹ میں 100 کروڑ روپئے مختص کرنے پر چیف منسٹر کے چندر شیکھر رائو اور وزیر این آر آئی امور کے ٹی راما رائو سے اظہار تشکر کیا۔ انہوں نے امید ظاہر کی کہ حکومت خلیج سے واپس ہونے والوں کے لیے تعلیمی اور معاشی ترقی سے متعلق اسکیمات تیار کرے گی۔ اے کے خان سے این آر آئیز کی ملاقات کا اہتمام خواجہ قیوم انور اردو ایڈیٹر ٹی نیوز نے کیا تھا۔ اے کے خان سے ملاقات کرنے والے این آر آئی تنظیموں کے نمائندوں میں اعجاز احمد خاں، اے آر سلیم، محمد اشرف، انجینئر محمد عزیز الدین، محمد علی نیئر، سید عزیز، سید نعمان، خلیل احمد، سید جنید ربانی اور امجد حسین شامل ہیں۔ اس موقع پر اسماعیل علی خان صدرنشین تلنگانہ اسٹیٹ الیکٹرسٹی بورڈ ریگولیٹری کمیشن بھی موجود تھے۔

TOPPOPULARRECENT