Saturday , November 18 2017
Home / شہر کی خبریں / حیدرآباد میں کچرے کی نکاسی ملک کیلئے مشعل راہ

حیدرآباد میں کچرے کی نکاسی ملک کیلئے مشعل راہ

بلدیہ سپروائزر کے ساتھ اجلاس، وزیر آئی ٹی کے ٹی آر کا خطاب
حیدرآباد 6 جنوری (سیاست نیوز) کچرے کی نکاسی اور اس کے استعمال میں حیدرآباد سارے ملک کے لئے مشعل راہ بن گیا ہے۔ حیدرآباد میں استعمال میں لائی جارہی ٹیکنالوجی اور اس کے فوائد دیگر ریاستوں کے لئے توجہ کا مرکز بنے ہوئے ہیں۔ ان خیالات کا اظہار ریاستی وزیر انفارمیشن ٹیکنالوجی مسٹر کے ٹی راما راؤ نے کیا۔ وہ آج حیدرآباد میں ایک شعور بیداری پروگرام کو مخاطب تھے۔ گریٹر حیدرآباد میونسپل کارپوریشن کے صفائی عملہ، سوپروائزر، مچھرکش ادویات کا چھڑکاؤ کرنے والے سوپروائزرس کا آگہی اجلاس منعقد کیا گیا۔ اس اجلاس میں گھر گھر تقسیم کئے گئے ڈبوں کے استعمال کے تعلق سے سوپروائزرس میں آگہی کروائی گئی۔ انھوں نے بتایا کہ اشیاء کے مسئلہ میں کسی بھی شہر میں کچرے کو الگ کرنے کا اقدام نہیں کیا جاتا۔ انھوں نے کہاکہ گیلے کچرے اور سوکھے کچرے کو الگ کرتے ہوئے اس کو بہتر انداز میں استعمال میں لایا جاسکتا ہے۔ ریاستی وزیر کے ٹی آر نے بتایا کہ ملک کو مثالی اور عالمی معیار کا شہر بنانے کی دوڑ میں گھر گھر کچرے کے ڈبے تقسیم کئے گئے اور 44 لاکھ کچرے کے ڈبے تقسیم کئے گئے اور کچرے کو منتقل کرنے کے لئے 2 ہزار آٹوز کی تقسیم عمل میں لائی جارہی ہے۔ انھوں نے بتایا کہ شہر حیدرآباد میں روزانہ 5 ہزار ٹن کچرا نکلتا ہے جس میں 4 لاکھ میٹرک ٹن کچرا حاصل کیا جاتا ہے۔ انھوں نے بتایا کہ گیلے اور سوکھے کچرے کو علیحدہ کرتے ہوئے ان سے یوریا اور برقی تیار کی جاسکتی ہے۔ اس اجلاس میں کمشنر بلدیہ ڈاکٹر جناردھن ریڈی کے علاوہ دیگر موجود تھے۔

TOPPOPULARRECENT