Tuesday , November 21 2017
Home / Top Stories / خاتون آہن ایروم شرمیلا کی 16 سالہ طویل بھوک ہڑتال ختم

خاتون آہن ایروم شرمیلا کی 16 سالہ طویل بھوک ہڑتال ختم

نئی دہلی 9 اگسٹ ( سیاست ڈاٹ کام ) دنیا کی سب سے طویل بھوک ہڑتال آج ختم ہوئی جب جذباتی انداز میں ایروم چانو شرمیلا نے گذشتہ 16 سال سے جاری اپنی بھوک ہڑتال آج ختم کردی ۔ انہوں نے شہد سے اپنی بھوک ہڑتال ختم کی اور میڈیا سے کہا کہ وہ اس لمحہ کو فراموش نہیں کرینگی ۔ منی پور کی خاتون آہن کہی جانے والی شرمیلا 5757 دن تک بھوک ہڑتال پر رہیں اور انہیں جیل کے دواخانہ میں زبردستی غذائی نالی سے سیال غذا دی جا رہی تھی ۔ انہوں نے پہلے اعلان کیا تھا کہ وہ آج بھوک ہڑتال ختم کرینگی اور سیاست میں داخل ہوجائینگی ۔ انہوں نے کہا کہ وہ چاہتی ہیں کہ مسلح افواج کو خصوصی اختیارات دینے والے قانون کی تنسیخ عمل میں لائی جائے ۔ اب وہ سیاسی جدوجہد کرینگی ۔ اپنی بھوک ہڑتال ختم کرنے کے بعد انہوں نے کہا کہ وہ سیاست میں داخلہ چاہتی ہیں ۔ انہیں خاتون آہن کہا جاتا ہے اور وہ اس نام پر کھری اتنا چاہتی ہیں۔ وہ چیف منسٹر بننا چاہتی ہیںاور چاہتی ہیں کہ لوگ ان میں یقین رکھیں۔ انہوں نے کہا کہ وہ ایک آشرم میں قیام کرینگی اور انہیں سکیوریٹی کی ضرورت نہیں ہے ۔ قبل ازیں انہیں دن میں عدالت نے رہا کردیا تھا ۔ 44 سالہ ایروم شرمیلا خود کشی کی کوشش کے الزام میں عدالتی تحویل میں تھیں۔ 2 نومبر 2000 کو آسام رائفلس کی بٹالین نے مبینہ طور پر امپھال کے قریب ایک گاوں میں 10 عام شہریوں کو ہلاک کردیا تھا اس کے تین دن بعد سے شرمیلا بھوک ہڑتال کر رہی تھیں۔       ( ابتدائی خبر صفحہ 3 پر )

TOPPOPULARRECENT