Friday , September 21 2018
Home / Top Stories / خاتون خودکش حملہ آورساجدہ رشاوی اور قربولی کو پھانسی پر لٹکا دیا گیا

خاتون خودکش حملہ آورساجدہ رشاوی اور قربولی کو پھانسی پر لٹکا دیا گیا

عمان۔ 4 فروری (سیاست ڈاٹ کام) اُردن نے آخر آج وہ کام کر دکھایا جو کوئی بھی ملک انتقامی کارروائی کے طور پر کرسکتا ہے۔ اردن کے ایک جانبار لڑاکا پائلٹ کی دولت اسلامیہ کے ہاتھوں سفاکانہ (زندہ جلا دینے) ہلاکت کے بعد دو جہادیوں کو جن میں ایک خاتون بھی ہے، کو سزائے موت دے دی گئی۔ عراقی خاتون ساجدہ الرشاوی جو خودکشی بم حملہ آور تھی اور القاعدہ

عمان۔ 4 فروری (سیاست ڈاٹ کام) اُردن نے آخر آج وہ کام کر دکھایا جو کوئی بھی ملک انتقامی کارروائی کے طور پر کرسکتا ہے۔ اردن کے ایک جانبار لڑاکا پائلٹ کی دولت اسلامیہ کے ہاتھوں سفاکانہ (زندہ جلا دینے) ہلاکت کے بعد دو جہادیوں کو جن میں ایک خاتون بھی ہے، کو سزائے موت دے دی گئی۔ عراقی خاتون ساجدہ الرشاوی جو خودکشی بم حملہ آور تھی اور القاعدہ رکن ضیاء القربولی کو مقامی وقت کے مطابق صبح 4 بجے پھانسی پر لٹکا دیا گیا۔ پھانسی یہاں سے جنوب کے علاقہ میں واقع سواقعہ جیل میں دی گئی اور اس وقت تختۂ وار کے قریب صرف ایک اسلامی قوانین کا ماہر آفیسر موجود تھا۔ اُردنی پائلٹ معاذ القصاصبیح کی ہلاکت کے بعد اُردن نے اب یہ فیصلہ کرلیا ہے کہ ایسے تمام قیدیوں کو جنہیں سزائے موت سنائی گئی ہے، یکے بعد دیگرے پھانسی پر لٹکا دیا جائے گا۔ اُردنی پائلٹ کو دولت اسلامیہ کے دہشت گردوں نے اس وقت گرفتار کرکے محروس کردیا تھا جب اس کا طیارہ گزشتہ سال ڈسمبر میں شام میں لینڈ کیا تھا۔ 44 سالہ رشاوی کو 2005ء میں عمان میں دہشت گردانہ اور ہلاکت انگیز حملے کرنے کی پاداش میں سزائے موت سنائی گئی تھی۔ دولت اسلامیہ نے پیشکش کی تھی کہ اگر اردنی پائلٹ کو زندہ آزاد کروانا ہے اور ساتھ ہی ساتھ ایک جاپانی یرغمال کو بھی آزاد کرنے کے لئے رشاوی کو رہا کردیا جائے تاہم ایسا کچھ بھی نہیں ہوسکا۔ جاپانی یرغمال کا سَر قلم کردیا گیا اور اُردن پائلٹ کو زندہ جلا کر ہلاک کردیا گیا۔ اس کے بعد حکومت اُردن نے یہ عزم کرلیا ہے کہ اگر اسے دنیا انتقامی کارروائی سمجھتی ہے تو سمجھتی رہے لیکن وہ ان تمام سزائے موت پانے والے ملزمین کی سزاؤں پر یکے بعد دیگرے عمل آوری کرتے ہوئے انہیں پھانسی پر چڑھا دے گا جس کی شروعات رشاوی کو سزائے موت دیئے جانے سے ہوئی۔اُردن کو مشرق وسطیٰ میں امریکہ کا حلیف ملک تصور کیا جاتا ہے کیونکہ عراق اور شام میں دولت اسلامیہ کے جنگجوؤں سے لڑنے کے لئے امریکہ کی قیادت والی اتحادی افواج میں جن عرب ممالک نے شمولیت اختیار کی ہے ، ان میں اُردن بھی شامل ہے۔

TOPPOPULARRECENT