Thursday , November 23 2017
Home / دنیا / خالدہ ضیاء کے روپوش بیٹے کو سات سال کی سزاء

خالدہ ضیاء کے روپوش بیٹے کو سات سال کی سزاء

ڈھاکہ ۔ 21 جولائی (سیاست ڈاٹ کام) بنگلہ دیش کی اپوزیشن قائد و سابق وزیراعظم خالدہ ضیاء کے بڑے بیٹے جو اس وقت روپوش ہیں، کو ایک عدالت نے 2.5 ملین امریکی ڈالرس کی غیرقانونی لین دین معاملہ میں ملوث پائے جانے پر سات سال کی سزائے قید سنائی ہے، اس طرح زیریں عدالت کے اس فیصلہ کو کالعدم قرار دیاجس نے بدعنوانی کے اس بڑے معاملہ میں 48 سالہ ملزم طارق رحمان کو بری کر دیا تھا۔ طارق رحمان بی این پی کے سینئر نائب صدر ہیں۔ انہیں ہائیکورٹ کی دو رکنی  بنچ نے 2003 اور 2007ء کے درمیان مذکورہ خطیر رقم سنگاپور منتقل کرنے کا قصوروار پایا جب بی این پی کی قیادت والا اتحاد ملک میں برسراقتدار تھا۔ رحمان کے خلاف فیصلہ ان کے غیاب میں سنایا گیا کیونکہ متعدد سمنوں کے باوجود وہ عدالت میں حاضر نہیں ہوئے۔ عدالت نے قبل ازیں انہیں روپوش قرار دیا تھا۔ عدالت کے ایک عہدیدار نے اخباری نمائندوں کو یہ بات بتائی۔ 2007ء سے رحمان لندن میں مقیم ہیں۔ ان پر منی لانڈرنگ ایکٹ کے تحت مقدمہ دائر کیا گیا اور ساتھ ہی ساتھ 200 ملین ٹکا (بنگلہ دیشی کرنسی) جرمانہ بھی عائد کیا گیا ہے۔

TOPPOPULARRECENT