Monday , June 18 2018
Home / اضلاع کی خبریں / خاندانی حکمرانی کے خلاف خاموش انقلاب

خاندانی حکمرانی کے خلاف خاموش انقلاب

کانگریس کو اقتدار پر لانے عوام فیصلہ کرچکی ہے : اتم کمار ریڈی
کریم نگر /8 مارچ ( سیاست ڈسٹرکٹ نیوز ) تلنگانہ میں کے سی آر کی خاندانی حکمرانی کے خلاف خاموش انقلاب آچکا ہے ۔ عوام کانگریس کو اقتدار پر لانے کا پوری طرح فیصلہ کرچکی ہے ۔ ان خیالات کا اظہار صدر پردیش کانگریس کمیٹی اتم کمار ریڈی نے حلقہ اسمبلی ماناکنڈور منڈل میں پرجا چیتنیہ یاترا کے جلسہ عام سے خطاب کرتے ہوئے کیا ۔ انہوں نے کہا کہ آنے والے ڈسمبر میں لوک سبھا اور تلنگانہ اسمبلی کے انتخابات کا قوی امکان ہے ۔ ان انتخابات میں کانگریس پارٹی کو بھاری اکثریت سے کامیابی ملنا یقینی ہے ۔ کے سی آر چار سال کے اقتدار میں ایس سی ایس ٹی ، بی سی اور میناریٹی طبقات کے ساتھ کافی لاپرواہی اور ناانصافی کا مظاہرہ کیا ہے ۔ انہیں دھوکہ دیا ہے ۔ کوئی وعدہ پورا نہیں کیا گیا ۔ ٹی آر ایس حکومت صرف چار افراد کے ہاتھوں میں ہے ۔ مل جل کر یہ لوگ ریاست کو لوٹ رہے ہیں ۔ انہوں نے بتایا کہ ماناکنڈور رکن اسمبلی دفتر کے سامنے دلتوں کو تین ایکر زمین دینے کے وعدہ سے مکرجانے پر دو دلت نوجوانوں نے خودسوزی کرلینے کی کوشش کی تھی ۔ خودکشی نوٹ میں یہ بات تحریر تھی ۔ اس تعلق سے ریاستی حکومت نے کیا کارروائی کی ؟ انہوں نے سوال کیا ۔ بدعنوانی میں ملوث چیرمین مارکٹ کمیٹی پر مقدمہ درج نہیں کیا گیا ۔ کے سی آر کے دور اقتدار میں دلتوں ، گریجنوں اور اقلیتوں و مسلم طبقات پر زیادہ حملے ہو رہے ہیں ۔ ان کی معاشی حالت بہت کمزور ہوچکی ہے ۔ ان سے ووٹ حاصل کرکے ان طبقات کو دھوکہ دیا گیا ۔ انہوں نے کہا کہ ایس سی ایس ٹی کے تحت اور دیگر طبقات کیلئے سب پلان بجٹ مختص کرنے میں کانگریس ہمیشہ آگے رہی ہے ۔ انہوں نے ٹی آر ایس حکومت کی جانب سے فی ایکر چار ہزار روپئے دینے کے اعلان کو مضحکہ خیز قرار دیا اور کہا کہ آخر کار چار سال میں ایسا کیوں نہیں کیا گیا ۔ انہوں نے کہا کہ کانگریس اقتدار پر آنے کے بعد دو لاکھ روپئے زرعی قرض معاف کردئے جائیں گے اور فصل انشورنس کا بھی فیصلہ کیا گیا ہے ۔ کسانوں کی پیداوار کی امدادی قیمت مقرر کی جارہی ہے ۔ اس موقع پر محمد علی شبیر ، ہنمنت راؤ ، جیون ریڈی ، سریدھر بابو ، پونم پربھاکر ، چیلمیڈا لکشمی نرسمہا راؤ اور دیگر موجود تھے ۔

TOPPOPULARRECENT