Saturday , November 18 2017
Home / شہر کی خبریں / خانگی اسکولس کے بچوں میں نظر کی کمزوری کا مسئلہ زیادہ

خانگی اسکولس کے بچوں میں نظر کی کمزوری کا مسئلہ زیادہ

حیدرآباد ۔ 16 اپریل (ایجنسیز) شہر میں خانگی اسکولوں میں زیرتعلیم بچوں میں نظر کی کمزوری کا تناسب سرکاری اسکولوں میں زیرتعلیم بچوں سے کہیں زیادہ ہے۔ خانگی اسکولس کے بچے آنکھ کے اس مرض سے بہت زیادہ متاثر ہورہے ہیں۔ ایک نئی اسٹڈی میں یہ بات بتائی گئی ہے۔ اس اسٹڈی کے آتھرس نے 2014 اور 2015ء کے دوران آنکھ کے اس مرض کیلئے 1600 اسکولی بچوں کا ٹسٹ کیا۔ اس اسٹڈی میں علاقہ کاچیگوڑہ کے خانگی اسکولوں اور گورنمنٹ اسکولوں کے مساوی تعداد کے بچوں کا ٹسٹ کیا گیا جس میں یہ بات معلوم ہوئی کہ ان بچوں کی تقریباً ایک چوتھائی تعداد آنکھ کے مسئلہ سے دوچار ہے۔ نظر کی کمزوری سے یا قریب کی نظر کے مسئلہ سے دوچار ہے۔ اسٹڈی میں یہ انکشاف کیا گیا کہ گورنمنٹ اسکولوں کے بچوں کے مقابل خانگی اسکولوں میں زیرتعلیم بچوں میں نظر کی کمزوری کا مرض زیادہ ہے۔ اس طرح خانگی اسکولوں کے بچوں میں یہ تناسب زیادہ ہے۔ اسٹڈی کی ایک آتھر عثمانیہ میڈیکل کالج کی ایم سوریہ پربھا لکشمی کے مطابق خانگی اسکولوں کے بچوں میں زیادہ خواندگی کے باعث جلد پتہ چلانے اور طویل نیر ۔ ورک سرگرمیوں سے آنکھ کو متاثر ہونے سے بچایا جاسکتا ہے۔ طویل وقت تک پڑھتے رہنا اور آوٹ ڈور سرگرمیوں کے نہ ہونے کو آنکھ کے اس مسئلہ کیلئے وجوہات بتایا گیا ہے۔ ماضی میں ملک کے دوسرے مقامات پر کی گئی اسٹڈیز میں بھی یہ ظاہر ہوا کہ پانچ گھنٹوں سے زیادہ وقت پڑھنے میں صرف کرنے والے بچوں، دو گھنٹوں سے زیادہ ٹیلیویژن دیکھنے والوں، موبائیل فونس کا استعمال کرنے والے بچوں، آوٹ ڈور سرگرمیوں سے دور رہنے والے بچوں میں نظر کی کمزوری کے مرض کا خطرہ لاحق ہوتا ہے۔ اسٹڈی میں یہ بھی کہا گیا کہ گورنمنٹ اسکولس کے بچوں میں وٹامن ’’اے‘‘ کی کمی کے باعث آنکھ میں سیاہ دھبے زیادہ ہوتے ہیں۔ نظر کی کمزوری ایک ایسا مسئلہ ہے، جس سے دنیا میں بچوں کی بڑی تعداد متاثر ہورہی ہے۔ اس طرح یہ صحت عامہ کا ایک اہم مسئلہ بن گیا ہے۔ اسٹڈی میں کہا گیا کہ گورنمنٹ اسکولوں کے 98-4 فیصد بچوں کے مقابل خانگی اسکولوں کے صرف 60 فیصد بچوں کیلئے ہی سالانہ ریگولر آئی چیک اپس کا اہتمام ہوتا ہے۔ آتھرس نے کہا کہ پیرینٹس اور ٹیچرس کو Mgopia کی علامات پر نظر رکھنی چاہئے جیسے کلاس میں دور سے بورڈ کو دیکھنے میں مشکل اور سر درد یہ دو شکایتیں اس مرض میں مبتلاء بچوں میں عام ہوتی ہیں۔

TOPPOPULARRECENT