Wednesday , November 22 2017
Home / شہر کی خبریں / خانگی اسکول فیس کے تعین پر اقدامات

خانگی اسکول فیس کے تعین پر اقدامات

جماعت واری سطح پر تفصیلات طلبی کا فیصلہ، عوامی شکایت پر حکومت کی بیداری
حیدرآباد۔9اگسٹ (سیاست نیوز) حکومت تلنگانہ نے ریاست کے تمام خانگی اسکولوں کی فیس کے تعین کے سلسلہ میں اقدامات کا آغاز کردیا ہے اور حکومت کی جانب سے فیس کو باقاعدہ بنانے کیلئے تشکیل دی گئی کمیٹی نے تمام خانگی اسکولوں کی آمدنی ‘ جماعت واری اساس پر وصول کی جانی والی تفصیلات اور دیگر امور کی تفصیلا ت اکٹھا کرنے کا فیصلہ کیا ہے ۔ بتایا جاتا ہے کہ حکومت کی جانب سے تشکیل دی گئی کمیٹی نے تمام اسکولوں کی تفصیلات حاصل کرتے ہوئے ان سے مذاکرات کے بعد سفارشات حکومت کو روانہ کرنے کا فیصلہ کیا ہے ۔ خانگی اسکولوں میں بے حساب فیس وصول کرنے کی شکایات کے بعد حکومت نے فیصلہ کیا تھا کہ آزادانہ کمیٹی کے قیام کے ذریعہ تمام خانگی اسکولوں کی فیس کا تعین کیا جائے کیونکہ ریاست کے تمام اضلاع بالخصوص شہری اسکولوں میں وصول کی جانے والی فیس کے متعلق کئی شکایات موصول ہو رہی ہیں لیکن اس کے باوجود کوئی روک لگانے کے اقدامات اب تک نہیں کئے گئے تھے لیکن اب موجودہ کمیٹی کا کہنا ہے کہ اس مرتبہ جو سفارشات پیش کی جائیں گی ان سفارشات کو قابل عمل بنانے کی حکمت عملی بھی تیار کی جا چکی ہے۔ بتایا جاتا ہے کہ خانگی اسکولوں کی جانب سے جاری لوٹ کھسوٹ کو روکنے کیلئے کئے جانے والے ان اقدامات کے لئے حکومت نے کمیٹی کو مکمل اختیارات فراہم کئے ہیں اور اسی لئے کمیٹی نے فیصلہ کیا ہے کہ ریاست کے تمام خانگی اسکولوں کی مکمل تفصیلات بالخصوص فیس‘ آمدنی ‘ اساتذہ کوادا کی جانے والی تنخواہوں کی تفصیل ‘ اخراجات اور اسکولوں و جن تنظیموں کے تحت اسکول چلائے جا رہے ہیں ان کی تفصیلات وصول کی جائیں تاکہ ان کا مکمل جائزہ لینے کے بعد ہی سفارشات تیار کی جائیں۔ حکومت تلنگانہ کی جانب سے سفارشات طلب کئے جانے کے بعد کمیٹی نے فیصلہ کیا ہے کہ وہ آن لائن ان تفصیلات کو جمع کرے۔محکمہ تعلیم کے عہدیداروں کے مطابق cdse.telangana.gov.in پر آئندہ دو یوم کے دوران تفصیلات کا فارم اپ لوڈ کرنے کے بعد اسکولوں کو مہلت فراہم کرتے ہوئے مطلع کیا جائے گا۔ غلط تفصیلات اور اندراجات کرنے والے اداروں کی مسلمہ حیثیت کے متعلق غور کیا جائے گا کیونکہ 90فیصد سے زائد اداروں کی تفصیلات کمیٹی نے اپنے طور پر حاصل کرلی ہیں۔ عہدیداروں نے بتایا کہ جب کبھی فیس کو باقاعدہ بنانے کے سلسلہ میں اقدامات کئے جاتے ہیں تو محکمہ تعلیم کے خلاف تعلیمی اداروں کے ذمہ دار عدالت سے رجوع ہوتے ہوئے احکامات پر حکم التواء حاصل کرنے کی کوشش کر رہے ہیں اسی لئے اس مرتبہ حکومت نے منظم اور قانونی طریقہ کار اختیار کرتے ہوئے تمام تفصیلات اکٹھا کرنے کے بعد ہی فیس کو باقاعدہ بنانے کے احکام جاری کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔بتایاجاتا ہے کہ کمیٹی کی جانب سے مکمل رپورٹ کی تیاری کے بعد اولیائے طلبہ و سرپرستو ں کو اسکول انتظامیہ کی ہراسانی سے بچانے کیلئے سفارشات کرے گی اور ان سفارشات کی بنیاد پر حکومت اور محکمہ تعلیم کی جانب سے احکامات کی اجرائی عمل میں لائی جائے گی۔

 

اسکولی بچوں کے لیے
یوم آزادی کے مقابلے
حیدرآباد ۔ 9 ۔ اگست : ( سیاست نیوز ) : ادارہ سیاست کے زیر اہتمام اسکول میں زیر تعلیم طلباء طالبات کے لیے یوم آزادی کے ضمن میں تحریری مقابلہ اور انڈیا کوئیز دفتر سیاست کے محبوب حسین جگر ہال عابڈس پر اتوار 13 اگست صبح دس بجے سے رکھا گیا ہے ۔ کسی بھی اسکول کے طلبہ ٹیم کی شکل میں حصہ لے سکتے ہیں ۔ ہر شریک طالب علم کو سرٹیفیکٹ دیا جائے گا اور انعامات دئیے جائیں گے ۔۔

Top Stories

TOPPOPULARRECENT