Sunday , December 17 2017
Home / جرائم و حادثات / خانگی فینانسرس کی ہراسانی سے نوجوان کی خودکشی

خانگی فینانسرس کی ہراسانی سے نوجوان کی خودکشی

متوفی کا ویڈیو وائرل ، علاقہ میں سنسنی ، فینانسروں میں خوف کا ماحول
حیدرآباد /12 اکٹوبر ( سیاست نیوز ) خانگی فینانسروں کی ہراسانی سے تنگ آکر ایک نوجوان نے خودکشی کرلیا ۔ شاہد حسین کی عمر تقریباً 30 سال بتائی گئی ہے ۔ اس نوجوان نے اپنی دکان میں انتہائی اقدام کرلیا ۔ پھانسی سے قبل اس نے اپنی خودکشی کے اقدام کی سلفی ریکارڈنگ کی اور انتہائی اقدام کی وجوہات اور ہراساں کرنے والے افراد کے ناموں کا بھی انکشاف کردیا ۔ شاہ عنایت گنج پولیس نے اطلاع کے فوری بعد جمعرات بازار علاقہ کو پہونچکر دوکان سے متوفی کی نعش کو برآمد کرلیا ۔ اس واقعہ کے بعد علاقہ میں سنسنی پھیل گئی اور شاہد حسین کا ویڈیو شہر بھر میں وائرل ہوگیا ۔ سوشیل میڈیا پر اس ویڈیو کے عام ہوتے ہی شہر کے فینانسروں میں خوف و دہشت پیدا ہوگئی اور عوام نے فینانسروں کے بڑھتے حوصلوں اور غیر سماجی سرگرمیوں سے متعلق پولیس پر بھی سوال اٹھائے ۔ اس سلسلہ میں انسپکٹر شاہ عنایت گنج پولیس مسٹر ایم رویندر ریڈی نے بتایا کہ شاہد حسین کی خودکشی کے واقع کے بعد پولیس نے ان کے بھائی جاوید حسین کی شکایت پر مقدمہ درج کرلیا ہے ۔ متوفی پیشہ سے کارپینٹر تھا جو پرانے دروازے اور کھڑکیاں فروخت کرنے کا کاروبار بھی کرتا تھا ۔ اس نے قرض لیا تھا جس کی ادائیگی اس کیلئے مشکل ہوگئی تھی ۔ انسپکٹر نے بتایا کہ شاہد حسین کے سلفی بیان اور ان کے بھائی کی شکایت کے مطابق 5 افراد بشمول دو خواتین کو شاہد کے رشتہ دار ہیں کے خلاف مقدمہ درج کرلیا ہے ۔ انہوں نے بتایا کہ سلطانہ بیگم ، جبین ، عبدالعلی ، بھرت لعل یادو اور کیلاش کے خلاف مقدمہ درج کرلیا گیا ہے ۔ انسپکٹر شاہ عنایت گنج پولیس نے بتایا کہ مذکورہ دو خواتین متوفی شاہد حسین کی خالہ ہوتی ہیں اور عبدالعلی اس کا پھوبی زاد بھائی ہے ۔ جبکہ بھرت لعل یادو شاہد کی دوکان کا مالک اور کیلاش پیشہ سے کنڈاکٹر ہے جو درمیانی شخص بتایا گیا ہے ۔ تاہم قرض کسی شکل میں دیا گیا تھا ۔ اور ادائیگی کے مسائل اور ہراسانی کیا تھا اس بات کا پتہ چلانے میں پولیس شاہ عنایت گنج مصروف تحقیقات ہے۔ شاہد حسین متصل مغل کالونی مائیلار دیوپلی علاقہ کا ساکن تھا ۔ ان کے بھائی جاوید حسین نے اپنے بیان میں ان 5 افراد بشمول دو خواتین کا ذکر کیا اور کہا کہ یہ لوگ قرض کی رقم کیلئے ان کے بھائی کو کافی ہراساں و پریشان کر رہے تھے ۔ شاہ عنایت گنج پولیس مصروف تحقیقات ہے ۔

 

TOPPOPULARRECENT