Friday , November 24 2017
Home / شہر کی خبریں / خانگی ڈگری کالجس کے قیام کے لیے منظوری و اجازت

خانگی ڈگری کالجس کے قیام کے لیے منظوری و اجازت

تلنگانہ کونسل فار ہائیر ایجوکیشن کا غور و خوض ، جنوری میں اعلامیہ متوقع
حیدرآباد ۔ 6 ۔ نومبر : ( سیاست نیوز ) : تلنگانہ اسٹیٹ کونسل برائے اعلیٰ تعلیم آئندہ تعلیمی سال کے لیے نئے پرائیوٹ ڈگری کالجس قائم کرنے کے لیے منظوری و اجازت دینے پر سنجیدگی سے غور کررہی ہے اور ماہ جنوری 2016 میں اس تعلق سے باقاعدہ طور پر اعلامیہ جاری کرنے پر غور کرتے ہوئے اعلامیہ جاری کرنے کا فیصلہ کیا ہے ۔ تلنگانہ اسٹیٹ کونسل برائے اعلیٰ تعلیم کے باوثوق ذرائع نے یہ بات کہی اور بتایا کہ ایک بھی پرائیوٹ ڈگری کالج نہ پائے جانے والے منڈل میں نئے پرائیوٹ ڈگری کالج کے قیام کو یقینی بنانے کے لیے اقدامات کریں ۔ لہذا تلنگانہ اسٹیٹ کونسل برائے اعلیٰ تعلیم کے عہدیدار بھی فی الوقت منڈل سطح پر کوئی کالج نہ پائے جانے والے مقام کی نشاندہی کرنے میں مصروف ہیں ۔ بتایا جاتا ہے کہ فی الوقت ریاست تلنگانہ میں چلائے جارہے پرائیوٹ ڈگری کالجوں میں معیار و تعلیمی اقدار ختم ہوتے جارہے ہیں ۔ بتایا جاتا ہے کہ ریاست تلنگانہ میں ہی نہیں بلکہ آندھرا پردیش کے بعض مقامات پر کالجس صرف اور صرف فیس ری ایمبرسمنٹ حاصل کرنے کے لیے ہی چلائے جارہے ہیں اور ایسے کالجوں کی تعداد زائد از 40 بتائے جاتے ہیں ۔ جس کی وجہ سے طلباء کو معیاری تعلیم حاصل نہ ہونے کے علاوہ فیس ری ایمبرسمنٹ کے باعث سینکڑوں کروڑ عوامی رقومات ضائع ہورہے ہیں ۔ ذرائع کے مطابق بتایا جاتا ہے کہ تلنگانہ اسٹیٹ کونسل برائے اعلیٰ تعلیم سب سے پہلے اس طرح کے غیر مجاز کالجوں کے تدارک کرنے کے لیے اپنی اولین توجہ مرکوز کرے گی ۔۔

TOPPOPULARRECENT