Wednesday , December 13 2017
Home / شہر کی خبریں / خسارہ بجٹ کے باوجود تیقنات پورا کرنے کی مساعی

خسارہ بجٹ کے باوجود تیقنات پورا کرنے کی مساعی

کسانوں کے 25 ہزار کروڑ قرض کی معافی چندرا بابو نائیڈو کا اہم کارنامہ : این لوکیش
حیدرآباد ۔ 24 ۔ اکٹوبر : ( سیاست نیوز ) : ریاست آندھرا پردیش میں تلگو دیشم پارٹی کی زیر قیادت حکومت عوام کو دئیے ہوئے تیقنات کو پورا کرنے کے لیے کوشاں ہے ۔ وزیر انفارمیشن ٹکنالوجی مسٹر ین لوکیش نے یہ بات کہی اور قبل ازیں انہوں نے مختلف ترقیاتی کاموں کا آغاز کیا ۔ بعد ازاں ضلع پرکاشم کے مارٹور میں منعقدہ جلسہ عام سے خطاب کرتے ہوئے مسٹر لوکیش نے کہا کہ ریاست آندھرا پردیش میں 16 ہزار کروڑ روپئے کا خسارہ بجٹ دینے کے باوجود چیف منسٹر مسٹر این چندرا بابو نائیڈو نے کبھی بھی عوام کے روبرو آکر یہ بات نہیں کہی کہ خسارہ بجٹ رہنے کی وجہ سے وہ عوام سے کیے ہوئے وعدوں اور دئیے گئے تیقنات کو پورا نہیں کر پارہے ہیں ۔ علاوہ ازیں مسٹر چندرا بابو نائیڈو نے اقدامات نہ دینے کا بھی عوام کے روبرو اظہار نہیں کیا ۔ انہوں نے مزید کہا کہ صرف کسان طبقہ کے واجب الادا 25 ہزار کروڑ روپئے قرضہ جات کو معاف کرنے کا سہرا چیف منسٹر آندھرا پردیش مسٹر این چندرا بابو نائیڈو کے سر جاتا ہے ۔ وزیر انفارمیشن ٹکنالوجی نے مزید کہا کہ ملک بھر میں کوئی ایک ریاست بھی اس طرح کی سوچ نہیں رکھتی لیکن چیف منسٹر مسٹر این چندرا بابو نائیڈو نے سوچ کر ہی کسانوں کے واجب الادا قرضہ جات فوری طور پر معاف کرائے اور کسانوں کو کافی راحت بہم پہنچائی ۔ انہوں نے کہا کہ سال 2019 تک ہر خاندان کے لیے دس ہزار روپئے کی آمدنی فراہم ہونے کے لیے اقدامات کئے جائیں گے ۔ اور ان دس ہزار روپیوں کی فراہمی کی ذمہ داری از خود لینے و عوام کو کسی قسم کی شکایت کا موقعہ فراہم نہ ہونے کا واضح تیقن دیا ۔۔

TOPPOPULARRECENT