Saturday , December 16 2017
Home / ہندوستان / خسارہ سے دوچار ایر انڈیا کے کفایتی اقدامات اندرون ملک پروازوں میں مرغن غذاؤں کی سربراہی بند

خسارہ سے دوچار ایر انڈیا کے کفایتی اقدامات اندرون ملک پروازوں میں مرغن غذاؤں کی سربراہی بند

نئی دہلی، 26 ڈسمبر (سیاست ڈاٹ کام) خسارہ سے دوچار حکومت کے زیرانتظام ایر انڈیا یکم جنوری سے اپنے اکانومی کلاس مسافرین کے لئے مرغن غذائیں فراہم نہیں کرے گا بشرطیکہ یہ سفر 90 منٹ کا ہو۔ علاوہ ازیں ظہرانہ اور عشائیہ کی فہرست سے چائے اور کافی کو بھی خارج کردینے کا فیصلہ کیا گیا ہے۔ ایر انڈیا فی الحال 90 منٹ کے سفر میں مسافرین کو سینڈوچ (ویجٹرین اور نان ویجٹرین) اور کیک سربراہ کرتا ہے۔ لیکن اب یہ یکم جنوری 2016 ء سے مسدود کردی جائے گی اور اس کے بجائے ترکاری سے تیار غذا افراہم کی جائے گی۔ ایرلائنز نے ایک سرکیولر میں بتایا کہ اندرون ملک 61 منٹ تا 90 منٹ سفر کرنے والے اکانومی کلاس مسافرین کے لئے ہندوستانی ترکاری سے تیار غذائیں یکم جنوری سے سربراہ کرنے کا فیصلہ کیا گیا ہے جس کا اطلاق ملک میں ایک شہر سے دوسرے شہر تک سفر کرنے والوں پر ہوگا۔ دریں اثناء سابق چیف منسٹر جموں و کشمیر عمر عبداللہ نے آج مختصر فاصلے کی فلائٹس میں صرف ترکاری سے تیار غذا فراہم کرنے سے متعلق ایر انڈیا کے فیصلہ پر اعتراض کیا ہے اور سوال کیاکہ یہ فیصلہ کیوں کیا گیا ہے جوکہ ناقابل فہم ہے۔ انھوں نے اپنے ٹوئٹر پر کہاکہ وہ ایر انڈیا کی ترقی کے خواہشمند ہیں لیکن نان ویجٹرین غذا کی فراہمی کا فیصلہ ناقابل قبول ہے جس پر نظرثانی کی ضرورت ہے۔

TOPPOPULARRECENT