Friday , December 15 2017
Home / شہر کی خبریں / خشک سالی مسئلہ پر تلنگانہ اسمبلی میں اپوزیشن کا ہنگامہ ، کانگریس کا واک آؤٹ

خشک سالی مسئلہ پر تلنگانہ اسمبلی میں اپوزیشن کا ہنگامہ ، کانگریس کا واک آؤٹ

اپوزیشن جماعتوں کا مباحث پر زبردست مطالبہ، حکومت پر مخالف کسان رویہ اپنانے کا الزام
حیدرآباد۔ 20 مارچ (سیاست نیوز) تلنگانہ قانون ساز اسمبلی میں آج خشک سالی کے موضوع پر اپوزیشن کی جانب سے زبردست ہنگامہ آرائی کی گئی۔ کانگریس نے اس ہنگامہ آرائی کے دوران حکومت کے رویہ کے خلاف احتجاج کرتے ہوئے ایوان سے واک آؤٹ کردیا۔ وقفۂ سوالات کے آغاز پر مسٹر ٹی جیون ریڈی نے ریاست میں خشک سالی کے موضوع پر سوال اُٹھاتے ہوئے حکومت سے استفسار کیا کہ آیا ریاست میں خشک سالی سے متاثرہ اضلاع کا اعلان کیا جانے والا ہے یا پھر خشک سالی سے متاثرہ منڈلوں کی کسی طرح سے مدد کی جارہی ہے۔ وقفۂ سوالات کے دوران مسٹر جی چنا ریڈی، مسٹر ٹی جیون ریڈی کے علاوہ دیگر ارکان اسمبلی نے پہلے ہی سوال پر ذیلی سوالات کی اجازت طلب کی جس پر اسپیکر اسمبلی مسٹر مدھو سدن چاری نے اجازت دے دی، لیکن طویل مباحث کے آغاز پر اپوزیشن ارکان کو روکنے کی کوشش کی گئی۔ ایک موقع پر اپوزیشن جماعتوں کے ارکان اسمبلی بشمول تلگو دیشم، سی پی آئی، وائی ایس آر سی پی نے ایوان کے وسط میں پہنچ کر احتجاج شروع کردیا اور کسانوں کے مسائل پر مختصر مباحث شروع کرنے کا مطالبہ کرنے لگے۔ اسی دوران مسٹر ٹی جیون ریڈی نے عدالتی احکام و دیگر دستاویزات کے ساتھ وزیر زراعت مسٹر پوچارم سرینواس کی نشست کے قریب پہنچ گئے جس پر سرکاری بینچوں کی جانب سے بھی احتجاج شروع کیا گیا۔ ان حالات کو دیکھتے ہوئے اسپیکر اسمبلی نے 10 منٹ کیلئے ایوان کی کارروائی کو ملتوی کردیا۔ بعدازاں تقریباً 20 منٹ بعد ایوان کی کارروائی کا دوبارہ آغاز ہوا لیکن کانگریس ارکان اسمبلی اپنے مطالبہ پر بضد تھے اور خشک سالی و کسانوں کے موضوع پر مباحث کا مطالبہ کررہے تھے۔ اسپیکر اسمبلی نے مذکورہ موضوع پر مباحث کیلئے رضامندی ظاہر کرتے ہوئے کہا کہ فی الحال یہ ممکن نہیں ہے لیکن جاریہ سیشن میں اس کی گنجائش فراہم کی جائے گی۔ اسپیکر اور حکومت کی جانب سے دی گئی طمانیت پر عدم اطمینان کا اظہار کرتے ہوئے اپوزیشن ارکان اسمبلی نے حکومت کے رویہ کو تنقید کا نشانہ بنایا اور حکومت کو ’’مخالف کسان‘‘ قرار دیتے ہوئے نعرہ بازی کی گئی۔ ابتداء میں احتجاج کے دوران مسٹر کڈیم سری ہری ڈپٹی چیف منسٹر نے وضاحت پیش کرتے ہوئے کہا کہ حکومت کی جانب سے کسانوں کی بازآبادکاری اور خشک سالی سے متاثرہ منڈلوں کی امداد کے لئے اقدامات کئے جارہے ہیں لیکن اپوزیشن جماعتیں اس جواب سے مطمئن نہیں تھیں اور مباحث شروع کرنے کا مسلسل مطالبہ کیا جارہا تھا۔ ایوان کی کارروائی کے آغاز کے بعد کانگریس ارکان اسمبلی کی جانب سے واک آؤٹ کیا گیا۔ اسی دوران اسپیکر نے وقفۂ سوالات کے اختتام اور مطالباتِ زر کی پیشکشی کا اعلان کیا۔

TOPPOPULARRECENT