Sunday , November 19 2017
Home / شہر کی خبریں / خطیب مسجد عزیزیہ کی متنازعہ تقریر 5 بڑے دینی اداروں سے رجوع

خطیب مسجد عزیزیہ کی متنازعہ تقریر 5 بڑے دینی اداروں سے رجوع

گستاخ خطیب اور صدر کمیٹی کے خلاف کارروائی کرنے کے مطالبہ پر وقف بورڈ کا اقدام
حیدرآباد۔/7فبروری، ( سیاست نیوز) وقف بورڈ نے مسجد عزیزیہ مہدی پٹنم کے خطیب اور صدر کمیٹی کی متنازعہ تقریر کو 5 بڑے دینی اداروں سے رجوع کرنے کا فیصلہ کیا ہے تاکہ علماء اور مفتی حضرات کی رائے حاصل کرتے ہوئے کوئی کارروائی کی جاسکے۔ وقف بورڈ میں آج اس وقت دوبارہ کشیدگی پیدا ہوگئی جب مخالف گروپ کا ایک دوسرے سے سامنا ہوگیا۔ غلامان مصطفی کمیٹی سے وابستہ افراد چیف ایکزیکیٹو آفیسر محمد اسد اللہ سے نمائندگی کے بعد واپس ہورہے تھے کہ ان کا سامنا مسجد عزیزیہ کے خطیب اور کمیٹی کے ذمہ داروں سے ہوگیا۔ اس موقع پر دونوں جانب سے ہلکی کشیدگی پیدا ہوگئی تاہم وقف بورڈ کے ذمہ داروں نے ٹکراؤ کو ٹال دیا۔ دونوں گروپس نے آج وقف بورڈ پہنچ کر اپنے اپنے موقف کی وضاحت کی۔ غلامان مصطفی کمیٹی جو کل سے احتجاج کررہی ہے اس نے ہفتہ کو پولیس میں شکایت درج کرائی تھی لیکن آج تک کوئی کارروائی نہیں کی گئی۔ اسی دوران اے سی پی آصف نگر نے وقف بورڈ کے عہدیداروں سے ملاقات کی اور معاملہ کو افہام و تفہیم کے ذریعہ ختم کرنے کا مشورہ دیا۔ تاہم فریقین کی جانب سے اپنے اپنے موقف پر اٹل ہونے کے باعث کوئی نتیجہ برآمد نہ ہوسکا۔ غلامان مصطفی کمیٹی نے متنازعہ بیان پر معذرت خواہی کیلئے جمعہ تک کی مہلت دی ہے جبکہ مسجد عزیزیہ کے خطیب اور کمیٹی کے ذمہ دار اپنے موقف پر قائم ہیں۔ ان کا کہنا تھا کہ انہوں نے حضور اکرم صلی اللہ علیہ وسلم اور اولیاء کی شان میں کوئی گستاخی نہیں کی ہے۔ ان کے بیان کو غلط انداز میں سوشیل میڈیا پر پیش کیا جارہا ہے۔ مسجد کمیٹی نے تجویز پیش کی کہ اگر حیدرآباد کے نامور دینی اداروں سے اس سلسلہ میں رائے حاصل کی جائے اور ان کی رائے تقریر کے خلاف ہو تو وہ معذرت خواہی کیلئے تیار ہیں۔ فریقین کے موقف کو دیکھتے ہوئے وقف بورڈ نے پانچ دینی مدارس سے رائے حاصل کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔ تقریر کا مواد اور سی ڈی جامعہ نظامیہ، دارالعلوم حیدرآباد، المعہدالدینی العالی، دارالعلوم انوارالہدی اور مفتی صادق محی الدین فہیم کو روانہ کرنے کا فیصلہ کیا ہے اور ان کی رائے حاصل ہونے کے بعد ہی مزید کارروائی کی جائے گی۔ چیف ایکزیکیٹو آفیسر نے اس سلسلہ میں سکریٹری اقلیتی بہبود سید عمر جلیل سے مشاورت کی اور یہ تجویز طئے کی گئی کہ پانچ دینی اداروں کی رائے حاصل ہونے تک متنازعہ خطیب کو کسی تقریر کی اجازت نہ دی جائے۔ بتایا جاتا ہے کہ اس سلسلہ میں وقف بورڈ کی جانب سے مسجد کمیٹی کو احکامات جاری کئے جائیں گے۔ اسی دوران مسلمانوں کے دونوں گروپس میں تنازعہ کی یکسوئی کیلئے شہر کے بعض بااثر افراد نے بھی کوشش کی لیکن کوئی نتیجہ برآمد نہیں ہوا۔
اوپن یونیورسٹی ڈگری میں داخلہ
اہلیتی امتحان
حیدرآباد ۔ 7 ۔ فروری : ( سیاست نیوز ) : ڈاکٹر بی آر امبیڈکر اوپن یونیورسٹی میں ڈگری کورسز بی اے ، بی کام ، بی ایس سی میں داخلے کے لیے اہلیتی امتحان 26 فروری کو مقرر ہے ۔ اس میں کامیابی کے بعد تین سالہ گریجویشن کی تکمیل مصروفیات کو جاری رکھتے ہوئے کی جاسکتی ہے ۔ ذریعہ تعلیم ، تلگو ، انگلش کے ساتھ اردو بھی ہے ۔ دسویں / انٹر ناکام طلبہ بھی اہل ہیں ۔ داخلے کی معلومات ، رہبری کے لیے محمڈن انسٹی ٹیوٹ جلوخانہ کامپلکس لاڈ بازار 24510012 پر ربط کریں ۔۔

TOPPOPULARRECENT