Monday , May 21 2018
Home / Top Stories / خلیجی ’’دوستوں‘‘ کے بغیر بھی قطر ہزار گنا بہتر : امیر قطر

خلیجی ’’دوستوں‘‘ کے بغیر بھی قطر ہزار گنا بہتر : امیر قطر

دوحہ۔ 14 نومبر (سیاست ڈاٹ کام) قطر کے ساتھ سعودی عرب اور امارات کے علاوہ جن دیگر ممالک نے سفارتی تعلقات منقطع کرچکے ہیں۔ اس پر قطر کو حیرت اور افسوس تو ضرور ہے کیونکہ اس واقعہ کو رونما ہوئے بھی کئی ماہ گذر چکے ہیں اور اب تک اس کا کوئی حل سامنے نظر نہیں آرہا تاہم امیر قطر نے آج جو بیان دیا، وہ یقیناً چونکا دینے والا ہے۔ انہوں نے کہا کہ اگر کچھ ممالک نے ان کا بائیکاٹ کر رکھا ہے تو اس کا مطلب یہ نہیں کہ قطر میں ترقی کی رفتار رک گئی ہے بلکہ یہ کہا جائے تو مبالغہ نہیں ہوگا کہ اپنے حلیف ممالک کے بغیر بھی قطر آج ہزار گنا بہتر موقف میں ہے۔ شوریٰ کونسل سے اپنے خطاب کے دوران امیر قطر شیخ تمیم بن حمدالثانی نے بتایا کہ انہیں یہ توقع تھی کہ مذکورہ ممالک قطر کے ساتھ کیا معاملہ کرنے والے ہیں اور اس کے لئے اس نے (قطر) ایک مستحکم منصوبہ بندی پہلے ہی کرلی تھی۔ انہوں نے ایک بار پھر اپنی بات دہرائی کہ سابق پڑوسیوں اور حلیف ممالک کے بغیر بھی قطر ہزار گنا بہتر ہے۔ ہم اپنے بائیکاٹ سے خوف زدہ نہیں ہیں۔ انہوں نے بتایا کہ حکومت فوڈ سکیورٹی پراجیکٹس پر کام کررہی ہے جبکہ آبی سکیورٹی پر خصوصی توجہ مرکوز کی گئی ہے کیونکہ ہم سمجھ چکے ہیں کہ ہمیں اپنا مستقبل اپنے پڑوسی عرب ممالک کے بغیر سنوارنا ہے۔ حالیہ دنوں میں ایران، ترکی اور اسپین نے قطر کو غذائی طمانیت کے لئے مدد کرنے کا اشارہ دیا تھا۔ جاریہ سال جون میں سعودی عرب، امارات، بحرین اور مصر نے قطر پر یہ الزام عائد کرتے ہوئے سفارتی تعلقات منقطع کرلئے تھے کہ وہ دہشت گردوں کو مالیہ فراہم کرتا ہے اور ایران سے اس کے انتہائی خوشگوار تعلقات ہیں جس کی قطر نے تردید کی تھی۔

TOPPOPULARRECENT