Thursday , November 23 2017
Home / دنیا / خلیجی سمندری علاقوں میں ایران اور ہندوستان کی مشترکہ مشقیں

خلیجی سمندری علاقوں میں ایران اور ہندوستان کی مشترکہ مشقیں

تہران ۔ 29 اگست (سیاست ڈاٹ کام) ایران اور ہندوستان آئندہ چند روز میں خلیجی سمندری علاقوں میں وسیع پیمانے پر جنگی مشقیں شروع کرنے والے ہیں۔ جنگی مشقوں کے سلسلے میں ہندوستان کے دو بڑے بحری جہاز ایران کی بندر عباس بندرگاہ پر لنگر انداز کردیے گئے ہیں۔ ایرانی خبر رساں اداروں کی رپورٹس کے مطابق بھارتی جنگی بحری جہاز “ڈسٹرائر” کل جمعہ کو علی الصباح بندر عباس بندرگاہ پہنچائے گئے جہاں جنوبی ایران کے ہرمزکان گورنری کے قریب لنگر انداز کیا گیا ہے۔ ہندوستان کے بحری جنگی جہاز F39 اور F37 اگلے چار روز تک بندرعباس ہی میں لنگر انداز رہیں گے جس کے بعد جنگی مشقوں کے لیے انہیں خلیجی پانیوں کی طرف لے جایا جائے گا۔ خبر رساں اداروں نے ایرانی نیول چیف ایڈ مرل حسین آزاد کا ایک بیان نقل کیا ہے جس میں ان کا کہنا ہے کہ ایران اور ہندوستان کے تاریخی تعلقات سے یہ ثابت ہوتا ہے کہ دونوں ملک علاقائی سلامتی اور دوطرفہ اقتصادی ترقی میں ایک دوسرے کے دست و بازو ثابت ہوئے ہیں۔” انہوں نے کہا کہ خطے میں اقتصادی اور معاشی شعبوں میں ترقی کے بعد ایران اور ہندوستان نے مشترکہ جنگی مشقوں کا فیصلہ کیا ہے۔ ہندوستان کے دو بحری جہاز اسی سلسلے میں بندر عباس بندرگاہ پر لنگر انداز ہوئے ہیں۔ ادھر ہندوستان کے ایک جنگی بیڑے betwa کے کپتان “کے ایم راماکرشنن” نے نامہ نگاروں کو بتایا کہ ہندوستان اور ایران کے درمیان دو طرفہ تعلقات ہمیشہ مثالی رہے ہیں۔ دونوں ملکوں میں تجارتی، تاریخی اور ثقافتی شعبوں میں کئی قدریں مشترک ہیں۔ تہران اور دہلی ماضی میں بھی مشترکہ فوجی مشقیں کرتے رہے ہیں۔ یہ کوئی نئی بات نہیں ہے۔

TOPPOPULARRECENT