Wednesday , December 13 2017
Home / شہر کی خبریں / خواتین میں ساڑیوں کی تقسیم کے خلاف تلگو دیشم و کانگریس کی مہم پر تنقید

خواتین میں ساڑیوں کی تقسیم کے خلاف تلگو دیشم و کانگریس کی مہم پر تنقید

اپوزیشن کو چیف منسٹر سے معذرت خواہی کرنے پر زور ، جی سرینواس یادو و ای سرینواس یادو کا ردعمل
حیدرآباد ۔ 20۔ ستمبر (سیاست نیوز) تلنگانہ راشٹرا سمیتی نے حکومت کی جانب سے خواتین میں ساڑیوں کی تقسیم کے خلاف تلگو دیشم اور کانگریس کی مہم پر سخت تنقید کی ۔ پارٹی کے یوتھ ونگ کے صدر جی سرینواس یادو اور سینئر قائد ای سرینواس نے میڈیا کے نمائندوں سے بات چیت کرتے ہوئے اپوزیشن سے مطالبہ کیا کہ وہ چیف منسٹر کے چندر شیکھر راؤ اور ریاست کی خواتین سے معذرت خواہی کریں۔ پارٹی کارکنوں کی جانب سے تلگو دیشم رکن اسمبلی ریونت ریڈی کا علامتی پتلا نذر آتش کیا گیا جنہوں نے ساڑیوں کی تقسیم کے خلاف سخت ریمارک کئے تھے ۔ قائدین نے کہا کہ ٹی آر ایس حکومت نے ملک بھر میں خواتین کے لئے منفرد اسکیم شروع کی ہے۔ کسی بھی ریاست میں اس طرح کی اسکیم کے بارے میں غور نہیں کیا گیا ۔ بتکماں کے موقع پر ریاست کی خواتین میں ساڑیوں کی تقسیم کا آغاز ہوا ہے ۔ سابق میں مسلمانوں اور عیسائیوں کے عید و تہوار کے موقع پر بھی غریبوں میں ساڑیاں تقسیم کی گئی تھی۔ بتکماں کے موقع پر 18 سال سے زائد عمر کی تمام غریب خواتین میں ساڑیوں کی تقسیم کے ذریعہ خواتین کو تہوار کی خوشیوں میں شامل کیا جارہا ہے لیکن اپوزیشن جماعتیں غیر ضروری تنقیدوں کے ذریعہ رکاوٹ پیدا کر رہی ہیں۔ انہوں نے کہا کہ کانگریس اور تلگو دیشم قائدین ناقص ساڑیوں کا الزام عائد کرتے ہوئے خواتین کی عزت نفس کو مجروح کرنے کی کوشش کر رہے ہیں ۔ انہوں نے کہا کہ کانگریس اور تلگو دیشم دور حکومت میں اس طرح کی کوئی اسکیم پر عمل نہیں کیا گیا ۔ سرینواس یادو نے الزام عائد کیا کہ کانگریس ، تلگو دیشم اور بی جے پی قائدین کے الزامات ان کی بوکھلاہٹ کو ظاہر کرتے ہیں۔ ان سرگرمیوں سے خواتین سخت ناراض ہیں۔ انہوں نے کہا کہ تقسیم کیلئے جو ساڑیاں حاصل کی گئیں، انہیں حکومت نے ریونت ریڈی ، جانا ریڈی ، جیون ریڈی اور اتم کمار ریڈی کے خاندانوں کیلئے حاصل نہیں کیا ہے ۔ اسکیمات پر عمل آوری سے عوام میں پارٹی کی بڑھتی مقبولیت سے بوکھلاہٹ کا شکار ہوکر اپوزیشن پارٹیاں الزام تراشی پر اتر آئی ہے۔ انہوں نے کہا کہ چند کرایہ کے کارکنوں کے ذریعہ بعض مقامات پر ساڑیوں کو جلانے کی کوشش کی گئی۔ حکومت نے اس معاملہ کا سختی سے نوٹ لیا ہے اور خاطیوں کے خلاف سخت کارروائی کی جارہی ہے ۔ ٹی آر ایس قائدین نے کہا کہ تلنگانہ ریاست کی تشکیل کے بعد سے تمام مذاہب کے عید و تہوار حکومت کی جانب سے منائے جارہے ہیں۔ تمام مذاہب کا احترام اور تہذیبوں کا تحفظ حکومت کا مقصد ہے۔ انہوں نے کہا کہ ریاست میں اپوزیشن کا کوئی مستقبل نہیں ہے ۔ کانگریس پارٹی کیلئے قائدین نہیں ، تلگو دیشم کیلئے کیڈر نہیں اور بی جے پی کیلئے ووٹر نہیں ہے۔ انہوں نے کہا کہ آئندہ انتخابات میں عوام تینوں پارٹیوں کو سبق سکھائیں گے۔

 

TOPPOPULARRECENT