Thursday , December 14 2017
Home / ہندوستان / خواتین کی چوٹی کاٹنے کے خلاف کشمیر میں ہڑتال ، ریل خدمات معطل

خواتین کی چوٹی کاٹنے کے خلاف کشمیر میں ہڑتال ، ریل خدمات معطل

سرینگر۔21 اکتوبر (سیاست ڈاٹ کام) وادی کشمیر میں خواتین کی چوٹی کاٹنے کے واقعات کے نہ تھمنے والے سلسلے کیخلاف آج مکمل ہڑتال منائی گئی جس سے عام زندگی مفلوج ہوکر رہ گئی۔ ہڑتال کے دوران کشمیر انتظامیہ نے ریاست کے گرمائی دارالحکومت سرینگر میں امن کی صورتحال برقرار رکھنے کیلئے شہر کے 7 پولیس تھانوں کے تحت آنے والے علاقوں میں کرفیو جیسی پابندیوں کا نفاذ مسلسل دوسرے دن بھی جاری رکھا۔ شہر کے سات پولیس تھانوں ایم آر گنج، نوہٹہ، خانیار، صفا کدل، رعناواری، کرال کڈھ اور مائسمہ کے تحت آنے والے علاقوں میں جمعہ کی صبح کرفیو جیسی پابندیاں نافذ کی گئی تھیں اور ان پابندیوں کی وجہ سے پائین شہر کے نوہٹہ میں واقع تاریخی و مرکزی جامع مسجد میں نماز جمعہ کی ادائیگی مسلسل چوتھے جمعہ کو بھی ممکن نہ ہوسکی تھی۔کشمیری علیحدگی پسند قیادت سید علی گیلانی، میرواعظ مولوی عمر فاروق اور محمد یٰسینملک نے عوام سے اپیل کہ کشمیری خواتین کی چوٹیاں کاٹنے کے گھناؤنے جرائم کے خلاف ہفتہ کو ریاست گیر ہڑتال اور سیول کرفیو نافذ کیا جائے ۔دریں اثناء وادی کشمیر میں ہفتہ کے روز علیحدگی پسند قیادت کی طرف سے دی گئی ہڑتال کی اپیل کے پیش نظر شمالی کشمیر کے بارہمولہ اور جموں خطہ کے بانہال کے درمیان چلنے والی ریل خدمات معطل رکھی گئیں۔

TOPPOPULARRECENT