Wednesday , December 13 2017
Home / شہر کی خبریں / خودکار معاشی وسائل سے بنیادی سہولتیں ممکن

خودکار معاشی وسائل سے بنیادی سہولتیں ممکن

جی ایچ ایم سی میں بنگلور کے اسکالرس سے کمشنرسومیش کمار کا خطاب
حیدرآباد۔/3اکٹوبر، ( سیاست نیوز) کمشنر و اسپیشل آفیسر گریٹر حیدرآباد میونسپل کارپوریشن مسٹر سومیش کمار نے کہا کہ جی ایچ ایم سی کی جانب سے موثر منصوبہ بندی، جدید اور عصری ٹکنالوجی کے استعمال کے تحت عوام کو تمام بنیادی سہولتوں کی فراہمی، ملازمین میں جوابدہی کی ذمہ داری کے علاوہ دیگر موثر طریقہ کار پر عمل آوری کے نتیجہ پر کارپوریشن کی آمدنی میں اضافہ کرنے کی راہ ہموار ہوئی۔ وہ آج دفتر جی ایچ ایم سی میں بعنوان ’’ ملک بھر میں بلدیات کی آمدنی کی راہ میں جی ایچ ایم سی ایک منفرد مثال ‘‘ بنگلور کی سپرا سدا انڈین انسٹی ٹیوٹ آف مینجمنٹ سینئر طلباء کے ایک وفد سے مخاطب تھے جس میں بنگلور آئی آئی ایم ڈائرکٹر مسٹر سوشیل وچانی سینئر فیکلٹیز اور اسکالرس نے شرکت کی۔ انہوں نے بتایا کہ خودکار معاشی وسائل کے ذریعہ مقامی محکمہ جات میں ترقیاتی پروگراموں کی انجام دہی کے تحت عوام کو اہم بنیادی سہولتوں کی فراہمی کو یقینی بنایا جاسکتا ہے۔ انہوں نے بتایا کہ جی ایچ ایم سی گزشتہ سال 2002 سے ٹیکس میں کسی قسم کا اضافہ کئے بغیر مالیاتی سال 2000-10 میں جائیداد ٹیکسوں کی وصول شدہ آمدنی364کروڑ تھی جس میں اضافہ کرتے ہوئے مالیاتی سال 2014-15 میں 1,115 کروڑ روپئے وصول کئے گئے جبکہ سال 2012-13 جی ایچ ایم سی کا بجٹ 1,955کروڑ تھا جس میں اضافہ کرکے سال2015-16میں 5,550 کروڑ روپئے کردیا گیا ہے۔ حاصل شدہ معاشی ترقی سے متعلق دہلی میں منعقدہ اسمارٹ سٹیز کی افتتاحی پروگرام کے موقع پر وزیر اعظم کے علاوہ ملک کے مختلف بلدیات نے بھی جی ایچ ایم سی کی طرز پر گامزن ہونے پر زور دیا ہے۔ جی ایچ ایم سی کے حدود کی جائیدادوں کی تفصیلات کو کمپیوٹرائزڈ، ٹیکس کی ادائیگی کی سہولتوں کی فراہمی، برقی صارفین کی تفصیلات، ٹیکسوں کی ادائیگی، 8 بڑے بینکوں سے تعلق رکھنے والے 537 برانچس کے ذریعہ 18 پاؤراسیوا کیندرم کے تحت، بل کلکٹرس کے ہینڈیلس مشینوں کے ذریعہ ٹیکسوں کی وصولی کیلئے دی گئی سہولتوں کے نتیجہ میں جی ایچ ایم سی کو ٹیکسوں کی وصولی میں کافی آسانی ہوگی۔ انہوں نے بتایا کہ گریٹر حیدرآباد زون کے حدود میں چیف منسٹر کے چندر شیکھرراؤ نے زائد از 21ہزار کروڑ روپئے کے صرفہ سے ترقی اور سڑکوں کے تعمیراتی کام انجام دینے کا منصوبہ تیار کیا ہے۔ عنقریب شہر حیدرآباد کو اسمارٹ سٹی کا درجہ حاصل ہوجائے گا۔ انہوں نے بتایا کہ شہر حیدرآباد کو سلم فری سٹی میں تبدیل کرنے کی غرض سے 2لاکھ ڈبل بیڈروم مکانات تعمیرکئے جائیں گے۔

TOPPOPULARRECENT