Wednesday , January 24 2018
Home / شہر کی خبریں / خود روزگار اسکیمات ، حکومت سے سبسیڈی کی فراہمی

خود روزگار اسکیمات ، حکومت سے سبسیڈی کی فراہمی

ادخال درخواست کیلئے ویب سائٹ کا عدم اعلان ، ضلعی سطح پر دفاتر فینانس کارپوریشن میں داخل کرنے کی درخواست

ادخال درخواست کیلئے ویب سائٹ کا عدم اعلان ، ضلعی سطح پر دفاتر فینانس کارپوریشن میں داخل کرنے کی درخواست
حیدرآباد۔/8جنوری، ( سیاست نیوز) حکومت کی جانب سے خود روزگار اسکیمات کے تحت اقلیتوں، پسماندہ طبقات اور درج فہرست اقوام و قبائیل کیلئے سبسیڈی کی فراہمی سے متعلق نئی اسکیم کیلئے درخواست دینے کی آخری تاریخ 21جنوری ہے۔ تاہم ابھی تک محکمہ سماجی بھلائی نے درخواستوں کے سلسلہ میں آن لائن ویب سائٹ کا اعلان نہیں کیا۔ بتایا جاتا ہے کہ محکمہ سماجی بھلائی اندرون دو یوم ویب سائٹ کا اعلان کردے گا جس پر اقلیتیں اور دیگر طبقات سبسیڈی کی فراہمی سے متعلق اسکیم سے استفادہ کیلئے درخواست داخل کرسکتے ہیں۔ اسی دوران نائب صدر نشین و منیجنگ ڈائرکٹر اقلیتی فینانس کارپوریشن محمد ہاشم شریف نے معاشی طور پر کمزور اقلیتی افراد سے اپیل کی کہ وہ اس اسکیم سے خاطر خواہ فائدہ اٹھانے کیلئے آگے آئیں۔

انہوں نے کہا کہ آن لائن درخواستوں کیلئے ویب سائٹ کا انتظار کرنے کے بجائے مستحق افراد کو چاہیئے کہ وہ اضلاع میں فینانس کارپوریشن کے ایکزیکیٹو ڈائرکٹرس کے پاس اپنی درخواستیں شخصی طور پر پیش کریں۔ انہوں نے کہا کہ چونکہ اسکیم کیلئے درخواست دینے کی مدت کافی کم ہے لہذا اس تاریخ میں توسیع کیلئے حکومت سے نمائندگی کی جائے گی۔ ہاشم شریف نے بتایا کہ موجودہ اعلان کردہ 50فیصد سبسیڈی سے متعلق نئی اسکیم اقلیتی فینانس کارپوریشن کی موجودہ سبسیڈی اسکیم کا متبادل ہوگی جس کے تحت اقلیتی امیدواروں کو 30ہزار روپئے سبسیڈی فراہم کرنے کا منصوبہ تھا۔ نئی اسکیم کے تحت ایک لاکھ روپئے مالیتی خود روزگار اسکیم کیلئے اقلیتی مالیتی کارپوریشن 50فیصد یعنی 50ہزار روپئے سبسیڈی فراہم کرے گا جبکہ مابقی 50فیصد رقم بینک بطور قرض جاری کرے گا۔ 2لاکھ روپئے مالیتی یونٹ کیلئے ایک لاکھ روپئے سبسیڈی فراہم کی جائے گی جو کہ سبسیڈی کی اعظم ترین حد ہے۔ انہوں نے بتایا کہ 30ہزار روپئے سبسیڈی سے متعلق موجودہ اسکیم کے تحت ابھی تک 12کروڑ روپئے جاری کئے جاچکے ہیں جبکہ مختلف بینکوں سے 30کروڑ روپئے مالیتی چھوٹے کاروباروں کو قرض کی منظوری حاصل ہوچکی ہے۔

اس طرح 30کروڑ روپئے موجودہ اسکیم کے تحت ہی جاری کئے جائیں گے۔ حکومت نے سبسیڈی فراہمی اسکیم کیلئے 100کروڑ روپئے مختص کئے ہیں جن میں 42کروڑ روپئے فی کس 30ہزار روپئے کی سبسیڈی سے متعلق موجودہ اسکیم پر ہی خرچ ہوجائیں گے۔حکومت نے 100کروڑ میں سے تاحال 50کروڑ روپئے جاری کئے ہیں اور بجٹ کی تیسری اور چوتھی قسط کی اجرائی ابھی باقی ہے۔ 50فیصد سبسیڈی سے متعلق نئی اسکیم کے تحت اقلیتی فینانس کارپوریشن کیلئے26ہزار 618 استفادہ کنندگان کا نشانہ مقرر کیا گیا ہے۔ کرسچین میناریٹیز فینانس کارپوریشن کیلئے 18.50 کروڑ مختص کرتے ہوئے 4590 امیدواروں کا نشانہ مقرر کیا گیا۔ منیجنگ ڈائرکٹر اقلیتی فینانس کارپوریشن نے بتایا کہ جاریہ ماہ زائد تعطیلات کے سبب درخواست دینے کی آخری تاریخ میں توسیع کی کوشش کی جارہی ہے۔ انہوں نے اقلیتوں سے اپیل کی کہ وہ اس اسکیم سے استفادہ کرتے ہوئے اپنے معاشی موقف کو بہتر بنائیں اور خود مکتفی بن جائیں۔

TOPPOPULARRECENT