Friday , October 19 2018
Home / ہندوستان / خوشحال ہند۔ بحرالکاہل علاقہ کیلئے ہند، ویتنام کا عہد

خوشحال ہند۔ بحرالکاہل علاقہ کیلئے ہند، ویتنام کا عہد

مختلف شعبوں میں باہمی تعاون کے تین معاہدوں پر دستخط ۔ بحیرۂ جنوبی چین تنازعہ پر بھی تبادلۂ خیال
نئی دہلی ۔ 3 مارچ ۔( سیاست ڈاٹ کام ) ہندوستان اور ویتنام نے آج عہد کیا کہ ہند۔ بحرالکاہل علاقہ کو کُھلا اور خوشحال خطہ بنانے کے لئے وہ مل جل کر کام کریں گے اور وہاں علاقائی سلامتی کو یقینی بنائیں گے ، جسے چین کے لئے ایک پیام سمجھا جارہا ہے جو اس خطہ میں توسیع پسندانہ عزائم کے ساتھ بڑھتا جارہاہے ۔ وزیراعظم نریندر مودی اور ویتنامی صدر تراندائی قوانگ کے درمیان وسیع تر موضوعات پر منعقدہ بات چیت کے بعد دونوں کلیدی شراکت داروں نے تین معاہدوں پر دستخط کئے جو نیوکلیائی توانائی ، تجارت اور زراعت کے علاوہ تیل اور قدرتی گیاس کی کھوج میں روابط کو فروغ دینے سے متعلق ہیں ۔ مودی نے کہاکہ فریقوں نے خطہ میں باہمی بحری تعاون کو مزید وسعت دینے اور وہاں علاقائی سلامتی کو یقینی بنانے کا عہد کیا ہے ۔ انھوں نے مہمان لیڈر کی موجودگی میں میڈیا کیلئے جاری کردہ بیان میں کہاکہ ہم اس علاقہ میں اقتدار اعلیٰ اور بین الاقوامی قوانین کی پاسداری کو یقینی بنائیں گے ۔

ظاہر طورپر بحیرۂ جنوبی چین کے تنازعہ کا حوالہ دیتے ہوئے ویتنامی صدر نے کہاکہ وہ آسیان کے ساتھ ہندوستان کی ہمہ رخی وابستگی کی تائید و حمایت کرتا ہے اور ادعا کیا کہ بحری علاقوں سے استفادہ کے معاملے میں تمام متعلقہ فریقوں کو آزادی ہونا چاہئے ۔ انھوں نے کہاکہ اس صمن میں اُبھر آنے والے تنازعات کی یقینی طورپر پرامن وسائل کے ذریعہ یکسوئی کرلینا چاہئے ۔ ویتنام اور کئی دیگر آسیان رُکن ممالک کے قدرتی وسائل سے مالا مال بحیرۂ جنوبی چین کے بارے میں چین کے ساتھ علاقائی تنازعات رکھتے ہیں ۔ جہاں ہندوستان ، امریکہ اور کئی دیگرعالمی طاقتیں اس تنازعہ کی بین الاقوامی قانون کی اساس پر یکسوئی کیلئے زور دیتے آئے ہیں ، وہیں چین متعلقہ ملکوں کے ساتھ باہمی فریم ورک تشکیل دینے کے حق میں رہا ہے ۔ قبل ازیں وزیر اُمور خارجہ سشما سوراج نے ویتنامی صدر سے ملاقات کی ۔ ترجمان وزارت اُمور خارجہ راویش کمار نے کہا کہ تمام شعبوں میں باہمی تعاون کو بڑھانے کے تعلق سے بات چیت ہوئی ۔ مہمان لیڈر قوانگ کا راشٹرپتی بھون میں روایتی استقبال بھی کیا گیا۔

TOPPOPULARRECENT