خوفناک گینگسٹر منا بجرنگی کو جیل میں گولی ماردی گئی

باغپت جیل میں قید گینگسٹرسے بحث پر واقعہ ، چار عہدیدار معطل ، تحقیقات کیلئے آدتیہ ناتھ کا حکم

باغپت (یوپی ) ۔ 9 جولائی ۔(سیاست ڈاٹ کام) مجرمین کی ٹولی کے خوفناک سرغنہ پریم پرکاش سنگھ عرف منا بجرنگی کو باغپت ڈسٹرکٹ جیل میں قید ایک دوسرے خوفناک غنڈہ نے بحث و تکرار کے بعد گولی مارکر ہلاک کردیا۔ چیف منسٹر یوگی آدتیہ ناتھ نے اس واقعہ کو سنگین قرار دیتے ہوئے تحقیقات کا حکم دیا ہے ۔ جیل کے چار عہدیداروں کو اس واقعہ کے ضمن میں معطل کردیا گیا ہے ۔ ایڈیشنل ڈسٹرکٹ جنرل محابس چندرپرکاش نے کہا ہے کہ 50 سالہ بجرنگی کو بشمول ایک اور گینگسٹر سنیل راٹھی 10 قیدیوں کے ساتھ گزشتہ سال 31 جولائی سے باغپت جیل کی ایک کوٹھی میں رکھا گیا تھا ۔ ایڈیشنل ڈائرکٹر جنرل نے کہاکہ راٹھی کو آیا پولیس تحویل میں دیا جارہا تھا ۔ ’’راٹھی نے جیل میں آج صبح بجرنگی سے بحت و تکرار کے بعد اُس (بجرنگی) کو گولی ماردی ۔ بجرنگی کو گزشتہ روز جھانسی جیل سے یہاں لایا گیا تھا اور 2017ء میں بی جے پی کے ایک رکن اسمبلی لوکیش ڈکشٹ سے جبری وصولی کی کوشش کے ایک مقدمہ کے ضمن میں آج مقامی عدالت میں پیش کیا جارہا تھا ۔ باغپت کے پولیس سپرنٹنڈنٹ جئے پرکاش نے کہاکہ سنیل راٹھی نے پوچھ گچھ کی جارہی ہے ۔ ایس پی نے کہا کہ ’’ایک سے زائد فائر کئے گئے ۔ واقعہ کے بعد راٹھی نے ہتھیار کو نالہ میں پھینک دیا ۔ ہم تحقیقات کررہے ہیں کہ یہ ہتھیار کس طرح جیل کے اندر پہونچ پایا ‘‘ ۔ پرنسپال سکریٹری داخلہ اروند کمار نے کہاکہ جیلر اُدئے پرتاپ سنگھ ، ڈپٹی جیلر شیواجی یادو ، ہیڈ وارڈن ارجیندر سنگھ اور وارڈن مادھو کمار کو اس واقعہ کے سلسلہ میں معطل کردیا گیا ۔ انھوں نے کہاکہ ایک مقدمہ درج کرلیا گیا ہے ۔ ضابطہ کے مطابق مجسٹریٹ کے ذریعہ تحقیقات کی جائیں گی ۔ منا بجرنگی کی بیوی سیما نے 29 جون کو ایک پریس کانفرنس طلب کرتے ہوئے الزام عائد کیا تھا کہ جیل میں قید اُس کے شوہر کی جان کو خطرہ لاحق ہے ۔ سیما نے کہا تھا کہ ’’میرے شوہر کی جان خطرہ میں ہے اور یوپی کے چیف منسٹر آدتیہ ناتھ جی سے یہ کہنا چاہتی ہوں کہ انھیں ( شوہر کو ) زخمی یا انکاؤنٹر میں ہلاک کرنے کی سازش کی جارہی ہے ‘‘ ۔ بجرنگی بشمول قتل و جبری وصولی زائد از 40 فوجداری مقدمات میں ملوث تھا ۔ بجرنگی نے 2012 کے اسمبلی انتخابات میں اپنا دل کے ٹکٹ پر جونپر کے حلقہ مادی یاھو سے مقابلہ کیا تھا ۔ مارچ 2016 ء میں بجرنگی کے برادر نسبتی بشپ بیت کو لکھنو کی وکاس نگر کالونی میں گولی مارکر ہلاک کردیا گیا تھا ۔ وہ بجرنگی کا کاروبار دیکھا کرتا تھا ۔ اُس کے ایک قریبی دوست طارق کو گزشتہ سال ڈسمبر میں لکھنو میں ہی گولی ماردی گئی تھی ۔ بجرنگی خود ایک ماہر شارپ شوٹر تھا۔

TOPPOPULARRECENT