Wednesday , July 18 2018
Home / Top Stories / داؤد ابراہیم ذہنی تناؤ کا شکار !

داؤد ابراہیم ذہنی تناؤ کا شکار !

اکلوتا بیٹا مذہبی تعلیمات پر سختی سے عمل پیرا ، پرتعیش زندگی ٹھکرادی
ممبئی ۔ /26 نومبر (سیاست ڈاٹ کام) انڈر ورلڈ ڈان داؤد ابراہیم اپنے پاس بے پناہ دولت اور طاقت رکھنے کے باوجود ذہنی تناؤ کا شکار ہے ۔ اس کی وجہ سے خاندانی تنازعہ بتایا جاتا ہے جسے وہ حل نہیں کرپارہا ہے ۔ داؤد ابراہیم کا 31 سالہ اکلوتا بیٹا معین نواز کاسکر حالیہ عرصہ تک تجارتی امور میں معاونت کررہا تھا لیکن اچانک اس کا ذہن تبدیل ہوگیا ۔ اس نے مذہبی تعلیم حاصل کرنے کے بعد سختی سے عمل پیرا ہونے کا فیصلہ کرلیا اور اب وہ ’’مولانا معین نواز کاسکر ‘‘ بن چکا ہے ۔ تھانے کے انسداد جبری رقمی وصولی سیل سربراہ پردیپ شرما نے مختلف ذرائع کے حوالے سے بتایا کہ داؤد ابراہیم اس وقت ذہنی تناؤ سے دوچار ہے ۔ داؤد ابراہیم کی تین اولادیں ہیں جن میں دو لڑکیاں اور ایک لڑکا شامل ہیں ۔ معین نواز کاسکر بتایا جاتا ہے کہ اپنے باپ کی غیرقانونی سرگرمیوں کے سخت خلاف ہے جس کی وجہ سے دنیا بھر میں خاندان کی بدنامی ہورہی ہے ۔داؤد ابراہیم کو یہ فکر لاحق ہے کہ اس کے مرنے کے بعد انڈر ورلڈ کا ذمہ دار کون ہوگا اور اس کی خطیر دولت کسی کے ہاتھ میں جائے گی ۔ داؤد کا چھوٹے بھائی اقبال ابراہیم کاسکر کو جبری وصولی کے مقدمات میں گرفتار کرلیا گیا ہے ۔ اس کے علاوہ ایک اور بھائی انیس ابراہیم کاسکرکی عمر زیادہ ہوچکی ہے اور اس کی صحت میں بہتر نہیں ہے ۔ دیگر بھائیوں کا انتقال ہوگیا ۔ اکلوتا بیٹا اس وقت اپنی بیوی اور تین چھوٹے بچوں کے ساتھ مسجد انتظامیہ کی جانب سے فراہم کئے گئے چھوٹے سے گھر میں زندگی گزاررہے ہیں ۔ معین نواز کاسکر مذہبی تعلیم و تدریس میں مصروف ہے اور وہ نماز کی امامت بھی کرتے ہیں ۔ انہوں نے عملاً اپنے والد کی دولت اور ان کے رہن سہن کو ٹھکرادیا ہے ۔

TOPPOPULARRECENT