Tuesday , June 19 2018
Home / ہندوستان / داؤد ابراہیم کے دست راست فاروق ٹخلا کی حوالگی

داؤد ابراہیم کے دست راست فاروق ٹخلا کی حوالگی

سی بی آئی دفترمیں پوچھ گچھ اور ٹاڈا عدالت میں پیش
ممبئی ۔ 8 مارچ ( سیاست ڈاٹ کام ) ممبئی سلسلہ وار بم دھماکے 1993ء کے اصل ملزم داؤد ابراہیم کے جرائم کے سینڈیکٹ کے رکن اور دست راست فاروق ٹخلا کو دوبئی سے ہندوستان کے حوالہ کردیا گیا ۔ ان کی فراری کے 25سال بعد سنٹرل بیورو آف انوسٹی گیشن ( سی بی آئی) نے محمد فاروق عرف فاروق ٹخلا کو گرفتار کرلیا ‘ انہیں ممبئی میں سی بی آئی کے دفتر لاکر پوچھ گچھ کی گئی اور ٹاڈا کی خصوصی عدالت کے سامنے پیش کیا گیا ۔ ممبئی بم دھماکوں میں کم از کم 257 افراد ہلاک اور 700 سے زائد زخمی ہوئے تھے ۔ اس کے علاوہ 12مارچ1993ء کو کئے گئے ان سلسلہ وار بم دھماکوںمیں کروڑہا روپئے کی املاک بھی تباہ ہوگئی تھیں ۔ اس کیس میں تقریباً 27 افراد ملز م ہیں ‘ ان میں خطرناک مافیا ڈان ابراہیم کسکر اور ٹائیکر میمن شامل ہیں ۔ جنہوں نے ان دھماکوں کی اصل سازش رچائی تھی ۔ یہ لوگ اب بھی تحقیقات کنندگان کی چنگل سے آزاد ہیں ۔ انہیں مفرور ملزم قرار دیا گیا ہے ۔ 57سالہ فاروق ٹخلا جن کے خلاف انٹرپول سے 1995ء میں ریڈ کارنر نوٹس جاری کی تھی تاکہ دوبئی سے انہیں گرفتار کیا جاسکے ‘ جہاں وہ روپوش تھے ۔ فاروق ٹخلا کو مجرمانہ سازش‘ قتل اور اقدام قتل کے الزامات کا سامنا ہے ۔فاروقی ٹخلااور ان کے بھائی محمد احمد منصور نے دھماکہ کے ذمہ داروں کو اہم مدد فراہم کی تھی ۔

TOPPOPULARRECENT