Sunday , September 23 2018
Home / شہر کی خبریں / دارالشفاء تا شاہ علی بنڈہ روزانہ گھنٹوں ٹریفک جام

دارالشفاء تا شاہ علی بنڈہ روزانہ گھنٹوں ٹریفک جام

آر ٹی سی بس سرویس کی بحالی سے بھی ٹریفک میں رکاوٹ

آر ٹی سی بس سرویس کی بحالی سے بھی ٹریفک میں رکاوٹ
حیدرآباد۔ 7 جولائی (سیاست نیوز) رمضان المبارک کے آخری دہے میں آر ٹی سی حکام نے پرانے شہر کے عوام کی تکالیف میں اضافہ کردیا ہے۔ پرانے شہر کے علاقوں میں جہاں مختلف ترقیاتی کاموں کے سلسلے میں کھدائی کے سبب بس سرویس کو بند کردیا گیا تھا، اچانک رمضان کے آخری دہے میں غیرمعلنہ طور پر آر ٹی سی بسوں کو اُن علاقوں میں داخل کردیا گیا جس کے باعث پرانے شہر کے عوام کئی تکالیف کا سامنا ہے۔ اہم اوقات میں ٹریفک جام اور بسوں کی آمد ورفت سے چھوٹے تاجروں کیلئے مشکلات جیسی صورتِ حال پیدا ہوچکی ہے۔ پرانے شہر کے عوام نے شکایت کی کہ گزشتہ چند دنوں سے دارالشفاء تا شاہ علی بنڈہ روڈ پر بسوں کی آمدورفت کا آغاز کردیا گیا جبکہ کئی ماہ سے اس روٹ پر بس سرویس بند تھی۔ دلچسپ بات تو یہ ہے کہ جس وقت اس روٹ پر بس سرویس بحال تھی اس وقت بھی رمضان کے آخری دہے میں بسوں کی آمدورفت کو مسدود کردیا جاتا رہا تاکہ ٹریفک کے مسائل پیدا نہ ہوں اور عوام کو تکلیف نہ ہو۔ ایسا محسوس ہوتا ہے کہ آر ٹی سی میں موجود بعض عناصر پرانے شہر کے عوام کی تکالیف میں اضافہ کا جان بوجھ کر منصوبہ بنایا اور غیرمعلنہ طور پر بسوں کو اس روٹ پر بحال کردیا گیا ہے۔ دارالشفاء تا شاہ علی بنڈہ روزانہ گھنٹوں ٹریفک جام ہے جس کے سبب عوام کو مشکلات کا سامنا ہے۔ پائپ لائن بچھانے کیلئے اس روڈ پر جو کھدائی کی گئی تھی آج تک اسے بند نہیں کیا گیا اور نئی سڑک تعمیر نہیں کی گئی جس کے نتیجہ میں منڈی میر عالم تا سلطان شاہی گرد و غبار کے سبب فضائی آلودگی کا ماحول بن چکا ہے۔ ایسے میں آر ٹی سی بس سرویس نے اس آلودگی میں اضافہ کا کام کیا۔ ماہ مقدس کے آخری دہے میں عوام خریداری کیلئے نکلتے ہیں اور ایسے وقت میں آر ٹی سی بسوں کو تنگ سڑکوں سے گذارنا ناقابل فہم ہے۔ ٹریفک پولیس کی کڑی مشقت کے باوجود عوام کی دشواریوں میں اضافہ ہی ہورہا ہے۔ آر ٹی سی حکام اور عوامی نمائندوں کو چاہئے کہ فوری اس جانب توجہ مرکوز کرتے ہوئے کم از کم عیدالفطر تک آر ٹی سی بسوں کی آمدورفت کو مسدود کردیں۔ عوام نے مطالبہ کیا ہے کہ کوٹلہ عالیجاہ تا سلطان شاہی نئی سڑک کی تعمیر کا کام فوری انجام دیا جائے کیونکہ مقامی عوام بالخصوص تاجرین کو گرد و غبار کے سبب مختلف بیماریوں میں مبتلا ہورہے ہیں۔ کئی تاجرین نے میڈیکل سرٹیفکیٹس کے ساتھ مقامی عوامی نمائندوں کی توجہ مبذول کروائی، اس کے باوجود سڑک کی تعمیر پر کوئی توجہ نہیں دی جارہی ہے۔

TOPPOPULARRECENT