Saturday , December 16 2017
Home / ہندوستان / دارجلنگ کے پہاڑی علاقوں میں بارش کی تباہ کاریاں

دارجلنگ کے پہاڑی علاقوں میں بارش کی تباہ کاریاں

سڑک رابطہ منقطع، مسافرین کو مشکلات
دارجلنگ ؍ گینگٹوک۔/13اکٹوبر، ( سیاست ڈاٹ کام ) دارجلنگ کے پہاڑی علاقوں میں آج موسلا دھار بارش اور زمینی تودے کھکسنے کے باعث عام زندگی متاثر ہوگئی اور قومی شاہراہ نمبر 10 کی خستہ حالی سے سلیگوری اور میرک کے درمیان سڑک رابطہ منقطع ہوگیا جس کے نتیجہ میں سیاحوں کو مشکلات پیش آئیں۔ حکومت مغربی بنگال نے جنگی خطوط پر سڑکوں کی مرمت کا کام شروع کردیا ہے جبکہ دارجلنگ اور میرک میں امداد و راحت کی ٹیموں کو طلب کرلیا گیا ہے۔ چیف منسٹر ممتا بنرجی کی ہدایت پر وزیر سیاحت گوتم دیو بارش کی تباہ کاریوں کا جائزہ اور راحت و امدادی کاموں کی نگرانی کیلئے دارجلنگ پہنچ گئے ہیں۔ موسلا دھار بارش سے قومی شاہراہ 10 کی ایک طویل پٹی کو نقصان پہنچا جو کہ سکم کو دارجلنگ سے مربوط کرنے والی واحد سڑک ہے۔ سڑک تباہی کے بعد کئی گھنٹوں تک ٹریفک مسدود ہوگئی۔ انہوں نے بتایا کہ پھنسے ہوئے مسافرین کو واپس لانے کیلئے اقدامات کئے جارہے ہیں۔ دارجلنگ ضلع مجسٹریٹ انوراگ سریواستو نے بتایا کہ گریدھرا کے قریب ایک دریا پر واقع عارضی پُل سیلاب کے پانی میں بہہ گیا جس کے باعث سلیگوری اور میرک کے درمیان سڑک رابطہ ٹوٹ گیا۔

جنگ کی باتیں ۔ نریندر مودی کا انتخابی حربہ
کانگریس لیڈر ڈگ وجئے سنگھ کا تاثر
نئی دہلی۔/13اکٹوبر( سیاست ڈاٹ کام ) کانگریس کے جنرل سکریٹری ڈگ وجئے سنگھ نے وزیر اعظم نریندر مودی پر ملک کو جنگ جیسے حالات کی طرف لے جانے کا الزام کرتے ہوئے آج کہا کہ انہیں اگلا الیکشن جیتنے کیلئے یہی واحد متبادل دکھائی دے رہا ہے۔ کانگریس کے جنرل سکریٹری نے ٹوئٹ کیا کہ ’ ’ جنگ کے سوداگر مودی دھیرے دھیرے ملک کو پاکستان کے ساتھ جنگ جیسے حالات کی طرف لے جانا چاہتے ہیں۔ اسے وہ اگلا الیکشن جیتنے کے واحد متبادل کے طور پر دیکھ رہے ہیں لیکن ایسا کرکے وہ صرف پاکستانی خفیہ ایجنسی آئی ایس آئی اور وہاں کی فوج کو فائدہ پہنچارہے ہیں اور پاکستان کی سیاسی قیادت کو کمزور کررہے ہیں۔ مسٹر سنگھ نے ہندوستان اور پاکستان سے جنگ کی باتیں ختم رکے بات چیت کے ذریعہ مسئلہ کا حل تلاش کرنے کی اپیل کی۔ انہوں نے سوال کیا کہ کیا نیوکلیائی ہتھیار سے لیس ہندوستان اور پاکستان جنگ لڑسکتے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ دونوں ملکوں کو جنگ کے بارے میں سوچنے کے بجائے بھوک اور قلت تغذیہ سے مل کر لڑنے کی پالیسی پر کام کرنا چاہیئے۔ایک دیگر ٹوئیٹ میں مسٹر سنگھ نے پاکستان اور ہندستان سے درخواست کی ہے کہ وہ جنگ کا کھیل بند کریں اور مذاکرات کی میز پر آجائیں۔

TOPPOPULARRECENT