Wednesday , November 22 2017
Home / Top Stories / داعش سے متاثر نوجوانوں کی اصلاح میں پولیس کا اہم رول:مودی

داعش سے متاثر نوجوانوں کی اصلاح میں پولیس کا اہم رول:مودی

The Prime Minister, Shri Narendra Modi delivering his address on the 3rd and concluding day of the Conference of DGPs, at Dhordo, Kutch, Gujarat on December 20, 2015, The Union Home Minister, Shri Rajnath Singh, the Ministers of State for Home Affairs, Shri Kiren Rijiju and Shri Haribhai Parthibhai Chaudhary are also seen.

رن آف کچھ۔20 ڈسمبر (سیاست ڈاٹ کام) آئی ایس آئی ایس (داعش) اور دیگر دہشت گرد گروپوں کی جانب سے نوجوانوں کی مبینہ ذہن سازی پر بڑھتی ہوئی تشویش کے درمیان وزیراعظم نریندر مودی نے کہا ہے کہ پولیس نگرانی کے عمل میں حساسیت کو ایک کلیدی عنصر بنانا چاہئے۔ مودی نے ایک ایسا لچکدار ادارہ جاتی ڈھانچہ تیار کرنے کی پرزور وکالت کی جس کے تحت پولیس کو مقامی افراد کے ساتھ موثر رابطہ قائم کرنا چاہئے۔ وزیر اعظم مودی نے ڈائرکٹر جنرلس آف پولیس (ڈی جی پیز) کی تین روزہ کانفرنس کے اختتامی اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ ’’حساسیت کو پولیس نگرانی کا ایک کلیدی عنصر بنانا چاہئے اور ایک ایسا لچکدار ادارہ جاتی ڈھانچہ تیار کرنا چاہئے جو پولیس فورس میں شہریوں کے تئیں حساسیت کو سمجھنے میں مدد کرسکے۔‘‘ وزیراعظم نے ملک کے 100 سے زائد اعلی افسران پولیس پر زور دیا کہ پولیس نگرانی اور دیگر کاررائیوں کے ضمن میں عوام کو اعتماد میں لیا جائے۔ نیز جرائم سے نمٹنے کے لئے عصری ٹکنالوجی کا استعمال کیا جائے۔ انہوں نے کہا کہ پولیس کو چاہئے کہ مقامی عوام کے ساتھ ربط پیدا کریں ۔وزیراعظم نے کہا کہ آندھرا پردیش، مہاراشٹرا، کرناٹک اور دہلی کی پولیس مشرق وسطی کے دہشت گرد گروپ آئی ایس آئی ایس کے زیر اثر آنے والے چند نوجوانوں کی اصلاح کے عمل میں ان (نوجوانوں) کے خاندانوں اور مقامی بزرگوں کو شامل کی ہے۔ مودی نے بین ریاستی سرحدوں پر ایک دوسرے کے پڑوسی اضلاع میں پولیس رابطوں اور وسیع تر تال میل کی ضرورت پر بھی زور دیا۔ وزیر داخلہ راج ناتھ سنگھ وزرائے مملکت امور داخلہ کرن ریجی جو اور ہری بھائی پارتھی بھائی چودھری نے بھی انٹلیجنس بیورو کی طرف سے منعقدہ اس کانفرنس میں شرکت کی۔

TOPPOPULARRECENT