Sunday , July 22 2018
Home / Top Stories / داعش کے ہاتھوں ہندو ستانیوں کا قتل قابل مذمت

داعش کے ہاتھوں ہندو ستانیوں کا قتل قابل مذمت

Relatives of Indian workers who were taken hostage in Iraq pose with photographs of their loved ones at the Golden Temple in Amritsar on June 19, 2014. India's new government struggled June 18 to make headway in its first foreign crisis as it tried to secure the release of 40 construction workers being held in war-torn Iraq, home to some 10,000 Indian expatriates. AFP PHOTO/NARINDER NANU

نئی دہلی: داعش کے ہاتھوں ۳۹ ہندوستانیوں کا قتل کرنے پر ملی رہنماؤں نے شدید الفاظ میں مذمت کی ہے۔وزیر خارجہ سشما سوراج کے مطابق عراقی شہر موصل کے پاس ایک قبر میں سے یہ نعشیں دستیاب ہوئی ہیں ۔ا ن کے ڈی این اے کے ٹسٹ سے ثابت ہوگیاکہ یہ وہی ہندوستانی ورکرس ہیں جنہیں داعش کے لوگو ں نے یرغمال بنالیا تھا۔

یہا ں جاری ایک پریس ریلیز میں ملی رہنماؤوں نے کہا کہ مظلوم ہندوستانیوں کا قتل مجرم صفت داعش کے ان گنت جرائم میں ایک نئی کڑی ہے۔جو اس تنظیم نے عراق شام اور دوسرے ممالک کے بے قصور مسلم و غیر مسلم مظلوموں کے ساتھ روا رکھا ہے۔

ہم واضح کردینا چاہتے ہیں کہ اسلام او رمسلمانوں کا اس گمراہ تنظیم سے کوئی واسطہ نہیں ۔یہ اسلام کا نام لیکر اسلام کی جڑیں کھودرہی ہیں۔

داعش اور القاعدہ جیسی دہشت گرد اور گمراہ تنظیمو ں کو امریکہ او راسرائیل جیسی طاقتوں نے کھڑا کیا ہے۔

ان کا اصل مقصد ہے کہ اسلام کو بد نام کیا جائے تا کہ لوگ اسلام اور شریعت کا نام لینے سے کترائیں۔داعش اور القاعدہ کے گمراہ فکر و عمل کی جتنی مذمت کی جائے کم ہے۔

ہم مسلمانوں او رنوجوانو ں کو نصیحت کر تے ہیں کہ اس قسم کی تنظیمو ں سے دور رہیں او ران کو اپنے علاقوں میں پنپنے نہ دیں۔

TOPPOPULARRECENT