Friday , June 22 2018
Home / ہندوستان / داؤد ابراہیم کی جائیداد کی قرقی کیلئے عدالت کا حکم

داؤد ابراہیم کی جائیداد کی قرقی کیلئے عدالت کا حکم

نئی دہلی 16 اگسٹ (سیاست ڈاٹ کام) انڈر ورلڈ ڈان داؤد ابراہیم اور ان کے ساتھی چھوٹا شکیل کے خلاف تازہ جائیداد قرقی کارروائی انجام دینے کے لئے دہلی کی ایک عدالت نے حکم دے دیا ہے۔ آئی پی ایل اسپاٹ فکسنگ کیس میں مفرور ان دونوں کی جائیدادوں کو قرق کرلیا جائے گا۔ 1993 ء کے ممبئی بم دھماکوں کیس میں ان کے خلاف کارروائی کرنے دہلی پولیس کی درخواس

نئی دہلی 16 اگسٹ (سیاست ڈاٹ کام) انڈر ورلڈ ڈان داؤد ابراہیم اور ان کے ساتھی چھوٹا شکیل کے خلاف تازہ جائیداد قرقی کارروائی انجام دینے کے لئے دہلی کی ایک عدالت نے حکم دے دیا ہے۔ آئی پی ایل اسپاٹ فکسنگ کیس میں مفرور ان دونوں کی جائیدادوں کو قرق کرلیا جائے گا۔ 1993 ء کے ممبئی بم دھماکوں کیس میں ان کے خلاف کارروائی کرنے دہلی پولیس کی درخواست پر عدالت نے یہ فیصلہ سنایا ہے۔

عدالت کی قبل ازیں دی گئی ہدایات کے پیش نظر دہلی پولیس کے خصوصی سیل نے عدالت کو بتایا کہ داؤد ابراہیم اور چھوٹا شکیل کی جائیدادوں کو 1993 ء کے ممبئی سلسلہ وار دھماکوں کے کیس میں پہلے ہی قرق کرلیا گیا ہے۔ تاہم عدالت نے پولیس کے اس جواب پر عدم اطمینان ظاہر کرتے ہوئے تعزیرات ہند کی دفعات 82 (مفرور شخص کے لئے سزا) 83 (مفرور افراد کے خلاف جائیداد قرقی کی کارروائی) کے تحت یہ حکم جاری کیا ہے۔ داؤد ابراہیم اور چھوٹا شکیل کے خلاف آئی پی ایل اسپاٹ فکسنگ اسکینڈل کیس میں مقدمہ جاری ہے۔ اگرچیکہ اے سی بی اسپیشل سیل نے ایک رپورٹ بھی داخل کی ہے جو جائیدادوں کی قرقی کے لئے کارروائی شروع کرنیسے متعلق ہے لیکن دستاویزات کے پورے بنچ میں ایسا کوئی بیان نہیں ہے کہ ہیڈ کانسٹبل نے کیا کہا تھا جس نے جائیدادوں کی قرقی کا عمل پورا کیا تھا۔

ان دستاویزات کو ترجمہ کے بغیر مراٹھی زبان میں داخل کیا گیا ہے۔ ہندی میں پیش کردہ دستاویزات بھی مناسب نہیں ہیں سب سے پہلے دستاویزات کو عدالت کی زبان میں پیش کیا جائے۔ ایڈیشنل سیشن جج بھارت پرشیار نے یہ بات کہی۔ عدالت نے اس کیس کے متواتر التواء پر بھی تشویش کا اظہار کیا اور پولیس کو ہدایت دی کہ وہ چارج شیٹ اور دیگر دستاویزات کی نقولات فراہم کرے اور ملزمین کے دیگر دستاویزات بھی دیئے جائیں۔ قبل ازیں خصوصی سیل نے عدالت کو بتایا تھا کہ ان مفرور ملزمین کے خلاف ناقابل ضمانت گرفتاری وارنٹ جاری کیا گیا ہے جن پر اس کیس میں چارج شیٹ ہے ان پر سزا کا اطلاق نہیں ہوسکا ہے کیوں کہ یہ لوگ ہندوستان میں دیئے گئے پتوں اور مقامات پر مقیم نہیں ہیں۔ داؤد ابراہیم اور چھوٹا شکیل کے علاوہ پاکستان کے جاوید چھوٹانی، سلمان عرف ماسٹر اور احتشام کے خلاف ناقابل ضمانت گرفتاری وارنٹ ہے۔

TOPPOPULARRECENT