Saturday , November 18 2017
Home / ہندوستان / دتاتریہ بے قصور، مرکز کی بھرپور تائید:مختار عباس نقوی

دتاتریہ بے قصور، مرکز کی بھرپور تائید:مختار عباس نقوی

نئی دہلی / باغپت۔ 19 ۔ جنوری (سیاست ڈاٹ کام) مرکزی منسٹر آف اسٹیٹ فروغ انسانی وسائل اوپیندر کشواہا نے کہا کہ حیدرآباد سنٹرل یونیورسٹی میں دلت اسکالر کی خودکشی کیلئے وزارت فروغ انسانی وسائل کو مورد الزام قرار نہیں دیا جانا چاہئے ۔ انہوں نے حقائق کا پتہ چلانے والی کمیٹی کی رپورٹ کی بنیاد پر ممکنہ کارروائی کا تیقن دیا۔ روہت کی خودکشی پر ملک بھر میں جاری طلبہ کے احتجاج پر تبصرہ کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ وزارت فروغ انسانی وسائل نے پہلے ہی حقائق پتہ چلانے والی کمیٹی قائم کردی ہے۔ جب تمام تفصیلات سامنے آئیں گی ، اسی وقت کارروائی کی جاسکتی ہے۔ اس دوران مرکزی وزیر مختار عباس نقوی نے دلت طالب علم کی خودکشی کو افسوسناک قرار دیا ۔ تاہم مرکزی وزیر بنڈارودتاتریہ کا دفاع کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ وہ بے قصور ہیں اور حکومت ان کے ساتھ ہے۔ انہوں نے کہا کہ طالب علم کے ارکان خاندان کی ممکنہ مدد کی جانی چاہئے لیکن اپوزیشن پارٹیاں جو کچھ کر رہی ہیں وہ اس کے عین برعکس ہے۔کانگریس یوراج راہول گاندھی صرف زخم پر نمک چھڑکنے وہاں گئے اور یہ درست نہیں۔

TOPPOPULARRECENT